30سیکنڈ کے اندر جوڑوں کا درد،ہڈیوں کا درد کمردرد ختم

30 Second k ander jooron ka derd, hadiyon ka derd khtm

اگردیکھا جائے تو ماضی کے وہ خطرناک امراض جیسے طاعون ہیضہ چیچک خسرہ اور پولیو جنہوں نے انسانوں کے ناک میں دم کررکھا تھا جدید میڈیکل سائنس نے ان پر تو قابو پالیا مگر چند دوسرے ایسے عوارض رونما ہوئے جن پر آج تک قابو نہ پایا جاسکا عارضی افاقہ اگرچہ ممکن ہوسکا ہے لیکن مکمل طور پر چھٹکارا ابھی دور کی بات ہےان امراض میں شوگر،ایڈز آرتھرائٹس یعنی جوڑوں کا درد اور ہیپاٹائٹس وغیرہ شامل ہیں۔

اس تحریر میں جوڑوں کے درد کے لئے ایک مجرب قرآن وظیفہ پیش کررہے ہیں جو نہ صرف جوڑوں کے درد کے لئے بلکہ ہر قسم کے درد کے لئے کام کرے گا ۔جوڑوں کادرد کیا ہے ؟یہ ایک موذی اور تکلیف دہ مرض ہے جس میں جوڑوں کی جھلیاں سخت ہو کر ہڈیوں کی شکل اختیار کرنے لگتی ہیں جوڑوں پر ورم آجاتا ہے مرض کی شدت میں جوڑ حرکت کرنا چھوڑ دیتے ہیں اور ہڈیاں ٹیڑھی ہوجاتی ہیں گھنٹیا کا زیادہ تر اظہار کہنی،گھٹنے اور ٹخنے کے جوڑ سے ہوتا ہے یہ مردوں کی نسبت عورتوں میں زیادہ پایا جاتا ہے اسی طرح نقرس یا چھوٹے جوڑوں کا درد ہاتھ پاؤں کی انگلیوں کے جوڑ انگوٹھے کے جوڑ وغیرہ سے ظاہر ہوتا ہے نقرس عورتوں کی نسبت مردوں میں زیادہ پایا جاتا ہے

جدید میڈیکل سائنس کی رو سے جوڑوں کے درد کا سب سے بڑا سبب یورک ایسڈ کوسمجھاجاتا ہے علاوہ ازیں کولیسٹرول اور ٹرائی گلائسرائیڈ کی اضافی مقدار بھی اس مرض کا ذریعہ بنتی ہیں جسم میں سوڈیم پوٹاشیم اور کیلشیم کی بڑھی ہوئی مقدار بھی اس مرض کا باعث ہے نیچرل پیتھی کے مطابق آتشک سوزاک نمونیا موٹاپا چوٹ لگنا خرابی معدہ گوشت کا زیادہ استعمال شراب نوشی قبض غذائی بے

اعتدالی اور زہریلے بخاروں کے اثرات کے علاوہ سودا صفرہ خون اور بلغم میں سے کسی ایک خلط کی طبعی مقدار کی زیادتی بھی جوڑوں کے درد کا سبب ہوسکتی ہے خواتین میں جوڑوں کے امراض کی وجہ امراض رحم اور قبل از وقت سنیاس کا شروع ہونا یا پھر رحم کا نکلوادینا بھی ہوسکتی ہے یادرہے ایسی خواتین جو بعد از زچگی ٹھنڈے گرم کا پورا خیال نہیں رکھتیں یا ایام مخصوصہ میں قبل از وقت نہا لیتی ہیں انہیں بھی جوڑوں کے درد کا سامنا رہتا ہے اس کے علاوہ یہ بیماری موروثی طور پر بھی حملہ آور ہوتی ہے نقرص میں پاؤں کے انگوٹھے کے جوڑ میں شدید درد ہوتا ہے اور انگوٹھے پر ورم آجاتا ہے بسا اوقات درد کے ساتھ بخار بھی ہوجاتا ہے جو بعد ازاں پسینہ بن کر اترجاتا ہے۔

درد جسم کے کسی بھی حصے میں بہت برا ہوتا ہے سخت تکلیف کا باعث ہوتا ہےانسان کے دانت میں درد ہوتو انسان کہتا ہے یہی درد سب سے زیادہ تکلیف دہ ہے اگر سر میں ہو تو وہ سمجھتا ہے اس سے بڑا درد کوئی نہیں غرض درد جس بھی انسانی عضو میں ہووہ تکلیف دہ ہوتا ہے اور جتنا شدید ہو اتنا ہی ناقابل برداشت ہوجاتا ہے۔یہ وظیفہ نہ صرف جوڑوں کے درد کے لئے کام کرے گا بلکہ یہ ہر قسم کے درد میں مجرب ثابت ہوگا ۔

یہ عمل انتہائی آسان ہے جو کہ قرآن پاک کی سورہ اعلیٰ کا ہے درد والی جگہ پر ہاتھ رکھ کر سورہ اعلی سبح اسم ربک الاعلی کو پڑھیں اور پھر ہاتھ پر پھونک مار کر درد والی جگہ پر پھیریں انشاء اللہ آپ کو درد سے فوری آرام ہوگا یہ عمل ہر قسم کے درد کے لئے ہے چاہے آپ کے سر میں درد ہو کمر میں درد ہو یا پھر جسم کے کسی بھی حصے میں درد ہو انشاء اللہ اس عمل سے آپ کو درد سے فوری نجات حاصل ہوگی۔اللہ ہم سب کا حامی و ناصر ہو ۔آمین

Leave a Comment