رزق کی کشادگی کی دعا ۔۔۔۔

Rizk ki kushadgii ki dua

بسم اللہ الرحمن الرحیم، السلام علیکم۔ناظرین کرام کو خوش آمدید کہتے ہیں اور ہم امید کرتے ہیں کہ آپ خیریت سے ہوں گے ۔۔اور ہماری دعا بھی ہے کہ اللہ کریم آپ کو سدا عافیت کے سائے میں رکھے۔۔۔ناظرینِ اکرام۔۔۔۔رزق تو بڑے وسیع معنی رکھتا ہے جس کا ذمہ رب نے لیا ہوا ہے پس ہمیں یقین ہونا چاہئے اس کے رازق ہونے کا مہربان اور قدر دان ہونے کا البتہ ہمیں اپنا حق عبودیت کبھی نہیں بھولناچاہئے اپنا احتساب کرتے رہنا چاہئے کہ یہی عمل میری روح کا سکون اور میرے دل کا قرار ہے تو سمجھو کہ میرا بیڑا پار ہے ۔

زندگی میں ہر رشتہ کو اہمیت دیں انکا حق احسن طریقے سے ادا کریں جانے کب یہ عمل کی مہلت رک جائے اور ہمارا رزق تھم جائے ۔ دنیا کی مشکلات سے بچنے کے لئے قر آن حدیث پر چلنا ہو گا سنت کو اپنانا ہوگا ۔چناچہ قرآن و حدیث میں بہت ساری دعائیں رزق کی کشادگی کے لئے ذکر کی گئی ہیں ۔انہی میں سے آج کی اس دعا کے الفاظ حدیث میں موجود ہیں ۔۔ آپ بھی ان الفاظ کو زبانی یاد کر لیجئے۔۔۔۔اَللّٰھُمَّ اِنِّیْ اَعُوْذُبِکَ مِنْ علْمٍ لَّاَ یَنْفَعُ وَمِنْ قَلْبٍ لَّا یَخْشَعُ وَمِنْ نَفْسٍ لَّا تَشْبَعُ وَمِنْ دُعَاءٍ لَا یُسْمَعُ

یعنی اےاللہ میں اپ کی پناہ چاہتا ہوں ایسے علم سے جو نفع نہ دے ، اور ایسے دل سے جو نہ ڈرے ، اور ایسی نفس سے جو سیر نہ ہو اور ایسی دعا سے جو قبول نہ ہو ۔ناظرین کرام ۔۔۔۔ آپ اس قرآنی دعا کو اپنی نماز میں بھی پڑھ سکتے ہیں۔۔ اور صبح شام کے وظائف میں بھی شامل کر سکتے ہیں۔ کیونکہ حضرت حسن بن علی رضی اللہ عنہ سے مروی ہے کہ غزوہ تبوک کے موقع پر آپ ﷺ منبر پر تشریف فرماہوئے ۔خدائے پاک کی حمد وثنا ء کے بعد آپ ﷺ نے فرمایا :

اے لوگو! میں اسی چیز کا حکم دیتا ہوں جس کا خدائے پاک حکم دیتا ہے اور اسی چیز سے منع کرتا ہوں جس سے خدائے پاک نے منع کیا ہے ۔پس تلاش رزق میں سنجیدگی اختیا ر کرو۔قسم اس خدا کی جس کے قبضہ میں ابوالقاسم کی جا ن ہے ۔تم میں سے ہر ایک کو رزق اس طرح تلاش کرتا ہے جس طرح موت ۔پس اگر رزق میں تنگی ہو جائے تو اللہ کی اطاعت سے اسے حاصل کرو۔اللہ پاک ہمیں بھی اس دعا کو پڑھنے والا بنائے اور رزق کے تمام مسائل حل فرمائے۔۔۔۔آمین

Leave a Comment