حضور صلی اللہ علیہ وسلم کی 23 سالہ دعاؤں کا نچوڑ

Hazoor SAW ki 23 saalah Duaaon ka nichoor

بسم اللہ الرحمن الرحیم، السلام علیکم۔ناظرین کرام کو خوش آمدید کہتے ہیں اور ہم امید کرتے ہیں کہ آپ خیریت سے ہوں گے۔۔اور ہماری دعا بھی ہے کہ اللہ کریم آپ کو سدا عافیت کے سائے میں رکھے۔۔۔ناظرینِ اکرام۔۔۔۔آج کی اس دعاکے الفاظ حدیث کی کتاب جامع ترمذی میں جلدنمبر۔۔2۔۔میں موجود ہیں ۔۔حضرت ابو امامہ رضی اللہ تعالی عنہ فرماتے ہیں ایک مرتبہ حضور صلی اللہ علیہ وسلم نے بہت زیادہ دعا مانگی لیکن ہمیں اس میں سے کچھ یاد نہ رہا ہم نے عرض کیا یارسول اللہ ﷺ آپ نے بہت زیادہ دعا مانگی لیکن ہمیں اس میں سے کچھ یاد نہ رہا۔۔۔

حضور ﷺ نے فرمایا کیا میں تمہیں کوئی ایسی جامعہ دعانہ بتا دوں جس میں یہ سب کچھ آجائے۔۔تو تم یہ دعا مانگا کرولہذا آپ بھی ان الفاظ کو زبانی یاد کر لیجئے تاکہ۔۔۔دنیا وآخرت کے فائدے آپ بھی حاصل کرسکیں۔اللَّهُمَّ إِنَّا نَسْأَلُكَ مِنْ خَيْرِ مَا سَأَلَكَ مِنْهُ نَبِيُّكَ مُحَمَّدٌ صلى الله عليه وسلم وَنَعُوذُ بِكَ مِنْ شَرِّ مَا اسْتَعَاذَ مِنْهُ نَبِيُّكَ مُحَمَّدٌ صلى الله عليه وسلم وَأَنْتَ الْمُسْتَعَانُ، وَعَلَيْكَ الْبَلَاغُ، وَلَا حَوْلَ وَلَا قُوَّةَ إِلَّا بِاللَّهِ۔۔۔یعنی اے اللہ میں آپ سے سوال کرتا ہوں ان تمام بھلائیوں کا جن کا سوال کیا آپ سے آپ کے بندے اور نبی محمد صلی اللہ علیہ وسلم نے اور میں آپ سے پناہ چاہتا ہوں

ان تمام شرور سے جن سے پناہ چاہی آپ کے بندے اور نبی محمد صلی اللہ علیہ وسلم نے تو ہی وہ ذات ہے جس سے مدد مانگی جاتی ہے اور تو ہی دعا قبول کرنے والا ہے نہیں گناہوں سے بچنے کی طاقت مگر اللہ کی حفاظت سے اور نہیں ہے نیکی کرنے کی قوت مگر اللہ کی مدد سےناظرینِ اکرام ۔۔۔۔آپ اس نبوی دعا کو اپنی نماز میں بھی پڑھ سکتے ہیں۔۔ اور صبح شام کے وظائف میں بھی شامل کر سکتے ہیں۔ کیونکہ اس دعا میں تمام بھلائیں اللہ تعالی سے مانگی گئی ہیں اور تمام برائیوں مصیبتوںسے حفاظت مانگی گئی ہے۔۔اللہ پاک ہمیں بھی اس قرآنی دعا کو پڑھنے والا بنائے اورتمام برائیوں مصیبتوں سے ہماری حفاظت فرمائے ۔۔۔۔آمین۔۔۔۔

Leave a Comment