گناہوں کی معافی ابراہیم علیہ اسلام کی دعا ۔۔۔۔

Hazrat Ibraheem Ki dua

بسم اللہ الرحمن الرحیم، السلام علیکم۔
ناظرین کرام کو خوش آمدید کہتے ہیں اور ہم امید کرتے ہیں کہ آپ خیریت سے ہوں گے ۔۔اور ہماری دعا بھی ہے کہ اللہ کریم آپ کو سدا عافیت کے سائے میں رکھے۔۔۔ناظرینِ اکرام۔۔۔۔آج پورا ملک بے امنی کا شکار ہے ، کسی کی جان، مال محفوظ نہیں، صبح گھر سے نکلنے والا شخص اپنے دماغ میں سینکڑوں وساوس لے کر نکلتا ہے، کہ پتہ نہیں کیا ہو جائے؟ عذاب الہی کبھی قتل وغارت گری کی صورت میں ظاہر ہوتا ہے، کبھی زلزلوں کی صورت میں، کبھی سیلاب تو کبھی قحط کی صورت میں اور اس عذاب الہی کے دنیاوی اسباب ڈھونڈ کر ان کے سدّباب کی ناکام کوشش کی جاتی ہے، لیکن اپنی طرز زندگی پر نظر نہیں ڈالی جاتی کہ ہماری زندگی کس ڈھنگ سے گزر رہی ہے، اس بات کی طرف ذہن نہیں جاتا کہ ہم نے اپنی بد اعمالیوں کی وجہ سے الله تعالیٰ کوناراض کیا ہوا ہے، الله تعالیٰ کو منانے کی ضرورت ہے اور اپنی گناہوں کی زندگی سے توبہ کرنے کی ضرورت ہے۔چناچہ توبہ کے یہ الفاظ سورت ابراہیم کی آیت نمبر 41 کی میں ذکر کئے گئے ہیں ۔ آپ بھی ان الفاظ کو زبانی یاد کر لیجئے۔۔۔اسی لئے آپ کی آسانی کے لئے ان الفاظ کو تلاوت بھی کئے دیتے ہیں جو کہ اسکرین پر بھی آپ کو نظر آ رہے ہیں۔۔۔رَ‌بَّنَا اغفِر‌ لى وَلِو‌ٰلِدَىَّ وَلِلمُؤمِنينَ يَومَ يَقومُ الحِسابُیعنی اے اللہ ! حساب کتاب کے دن مجھے اور میرے ماں باپ کو اور مومنوں کو بخش دینا۔ناظرین کرام ۔۔۔۔ آپ اس قرآنی دعا کو اپنی نماز میں بھی پڑھ سکتے ہیں۔۔ اور صبح شام کے وظائف میں بھی شامل کر سکتے ہیں۔ کیونکہ ابراہیم علیہ اسلام نے استغفار انہی الفاظ میں کی ہے۔اور استغفار سے متعلق آنحضرت ﷺ نے لوگوں سے مخاطب ہو کر فرمایاکہ لوگو! اللہ کی بارگاہ میں توبہ کرو۔ میں ایک دن میں سو مرتبہ اللہ رب العزت سے دعا کرتا ہوں ۔لہذااللہ پاک ہمیں بھی اس دعا کو پڑھنے والا بنائے اور ہمیں گناہوں سے توبہ کرنے کی توفیق عطا فرمائے۔۔۔۔آمین ۔۔۔۔

Leave a Comment