نبی کریم ﷺ کی شان میں وہ باتیں جو شاید ہی پہلے آپ کے علم میں ہوں گی

Nabii kaream SAW ki shan

ایک حاسد شخص اگر چاند سے حس کرنے لگے اور روزانہ چاند کی طرف منہ کرکے تھوکنا شروع کردے تو اس کا تھوک لوٹ کر کہاں آئے گا؟میں نے سنا ہے ملحد صبح اُٹھ کر منہ نہیں دھوتے بس چاند پر تھوکنا شروع کردیتے ہیں منہ خود ہی دھل جاتا ہے ۔ انشاء جی کہتے تھے دیوانوں سی نہ بات کرے تو اور کرے دیوانہ کیا؟یہی اُصول ملحدو پر فٹ ہوتا ہے ۔ان کی گفتگو کی غلاظت ان کے منہ کی اور دماغ کی غلاظت کا پتہ دیتی ہے ۔ یہ الیکٹرانک چوہدری فیس بک کے پردے کے پیچھے چھپ کر اللہ اور اس کے رسولؐ کےبارے میں ایسی ہرزہ سرائی کرتے ہیں جو اگر حقیقی زندگی کسی کے سامنے کر ڈالیں تو ان کی بوٹی بھی سلامت نہ بچے پھر اس پر ڈھٹائی سے کہتے ہیں کہ اللہ اور رسول کی زبردستی ملحدوں سے عزت کروانا کھلی دہشتگردی ہے ۔استغفراللہ کسی کی عزت نہ کرنے میں اور اس کی توہین کرنے میں فرق ہوتا ہےاس دنیا کو کوئی بھی معاشرہ آ پ کو کسی عام انسان کی توہین کی اجازت بھی نہیں دیتا کجا یہ کہ آپ کسی مذہب کی مقدس ہستیوں کی توہین کرنے بیٹھ جائیں اور اس پر یہ امید کہ آپ کو معاشرے میں کوئی مقام مل جائے گا؟ جس دن فیس بک باہر نکلے اسی دن قبر کھد جائے گی ان ملحدوں کی بیٹھے رہو چپ کر کے فیس بک کی اسی کھڈ میں جہاں گھسا رکھا ہے تمہیں مومنوں نے خبردار باہر نکلنے کی سوچنا بھی نہ ورنہ لاشیں سڑکوں پہ سڑیں گی تمہاری ۔کسی نبی کی توہین کی بیڑہ اٹھایا ہے تم نے ؟کس چراغ کو اپنی پھونکوں سے بجھانے نکلے ہو؟دو رکعت نماز میں ایک بار سلام او ردو مرتبہ درود بھیجا جاتا ہے ان پر ایک مسلمان دن میں کم ازکم 42رکعتیں پڑھتا یعنی اکیس سلام اور بیالیس درود صرف ایک مسلمان ایک دن میں بھیجتا ہے اگر ایک مسلمان کی اوسط عمر پچاس سال بھی فرض کی جائے تویہ 18250دن بنتے ہیں
یعنی ایک مسلما ن اپنی زندگی کی صرف نمازوں میں تین لاکھ تراسی ہزار دو سوپچاس مرتبہ سلام او ر سات لاکھ چھیاسٹھ ہزار پانچ سو مرتبہ درود بھیجتا ہے ۔نمازوں کے علاوہ جو درود وسلام بھیجے جاتے ہیں وہ اس کے علاوہ ہیں اور ابھی یہ صرف ایک مسلمان کا حساب ہے اس وقت دنیا میں سوا ارب کے قریب مسلمان ہیں کیا کوئی ملحد مجھے بتا سکتا ہے کہ اگر میں سات لاکھ چھیاسٹھ ہزار پانچ سو کو سوا ارب سے ضرب دوں تو جواب کیا آئے گا؟ورفعنا لک زکر ک ۔بات ابھی ختم نہیں ہوئی یہ صرف ان مسلمانوں کا حساب ہے جو اس وقت روئے زمین پر موجود ہیں پچھلے 1400سوسالوں میں جو مسلمان گزر گئے ان کا حساب ابھی باقی ہے ۔مگر بات یہاں بھی ختم نہیں ہوتی ۔ اللہ تعالیٰ قرآن میں فرماتے ہیں:”بے شک اللہ تعالیٰ اور فرشتے نبی پر درود وسلام بھیجتے ہیں اے لوگوں جو ایمان لائے ہو! تم بھی کثرت سے نبی پر درود وسلام بھیجا کرو۔(سور ۃ الاحزاب 56) زمین پر جس مقام پر مسلمانوں کا کعبہ ہے اس کے عین اوپر آسمان پہ فرشتوں کا کعبہ ہے جسے بیت المعمور کہتے ہیں۔اس بیت المعمور میں ایک وقت میں ستر ہزار فرشتے طواف کرتے ہیں اور جو فرشتہ ایک با رطواف کرتا ہے اس کی دوبارہ قیامت تک باری نہیں آتی ۔ اب کون حساب لگائے گا فرشتوں کی تعداد کا اور ان کے بھیجے ہوئے درود وسلام کی تعداد کا ؟واضح رہے کہ فرشتوں کاکام ہی محض عباد ت ہے ۔ انسان کی عبادت فرشتوں کے مقابلے میں کسی گنتی میں ہی نہیں آتی ۔
کبھی سوچا ہے اس نبی پر کی جانیوالی ہر زہ سرائی ان تک پہنچی بھی ہوگی یا نہیں؟اس قسم کی حرکتیں صرف مسلمانوں کو اشتعال انگیز کرنے کی کوشش کے سوا کچھ نہیں اپنی موت کو خود دعوت دیتے ہو پھر کہتے ہو ہماری جان خطرے میں ہے ۔ کیا کوئی ملحد مجھے محمدﷺ کے مقابل کسی ایک بھی ایسے شخص کا نام بتا سکتا ہے جس کا اتنی بار دنیامیں محض تذکرہ ہی کیا جاتا ہوجتنی بار میرے پیارے نبی پر درودسلام بھیجا جاتا ہے ؟پوری تاریخ کھنگال ڈالو ساری دنیا اپنے ساتھ ملا لو چلو اتنا نہیں تو قریب ترین مقابل ہی بتا دو چیلنج کرتاہوں میں آج تمام ملحدوں کو اور سارے عالم کفر کو کوئی ایک بندہ ایسا لے آئو جس کا اتنا تذکرہ بھی ہوتا ہو؟یا کوئی قریب ترین مقابل؟ہے ہمت کسی میں کہ اس حساب کے مقابلے میں دوسرے نمبر پہ آنیوالے کسی بھی شخص کے کیے جانے والے تذکرے کا حساب پیش کرسکے ۔کیونکہ ورفعنا لک ذکرک۔

Leave a Comment