3 انسان ایسے جن کی نماز قبول نہیں ہوتی

3 Insan aisy jin ki nimaz kabool nai hoti

اقوال زریں 3 انسان ایسے ہیں جن کی نماز قبول نہیں ہوتی۔ ایسا غلام جو مالک کی اجازت کے بغیر بھاگ جائے۔ جب تک پلٹ کر نہیں آتا ۔اس کی نماز قبول نہیں ہوتی۔ ایسی عورت جو اپنے خاوند کو ناراض کرلیتی ہے ۔جب تک اس کو راضی نہیں لیتی۔ تو اس کی نماز قبول نہیں ہوتی۔ ایسا انسان جو لوگوں کو نماز پڑھاتا ہے۔ لیکن لوگ اس کے گناہوں کی وجہ سے اس کے پیچھے نماز پڑھنا نہیں چاہتے۔اس کی نماز بھی قبول نہیں ہوتی۔رسول ﷺ نے فرمایا ہمارے اور کافروں کے درمیان فرق نماز ہے۔ جس نے نماز چھوڑ دی اس نے کفر کیا جو شخص فجر کی نماز جان بوجھ کر چھوڑ دیتا ہے۔ اللہ تعالیٰ اس کے چہرے سے سولاہ کا نور نکال دیتا ہے ۔جو ظہر کہ نماز جان بوجھ کر چھوڑ دیتا ہے ۔اس کے رزق سے برکت ہٹا دی جاتی ہے ۔جو عصر کی نماز جان بوجھ کر چھوڑ دیتا ہے۔ اللہ اس کے جسم کی طاقت کو سلب کر لیتے ہیں۔ جو مغرب کی نماز جان بوجھ کر چھوڑ دیتا ہے۔ اس کو اس کی اولاد سے کبھی کوئی نفع نہیں پہنچے گا جو عشاء کی نماز جان بوجھ کر چھوڑے گا اس کا کبھی راحت کی نیند نہیں ہو گی۔

Leave a Comment