شفاعت ِ رسول ﷺ پانے کا وظیفہ

Shafaat-e- Rasool ﷺ pany ka wazeefa

آج میں آپ دوستوں کے لیے بہت ہی پیارا وظیفہ لے کر حاضر ہوا ہوں۔ جو چاہتا ہے کہ آپ ﷺ روزِ محشر اس کی شفاعت کریں تو وہ قرآن ِ پاک کی دو چھوٹی چھوٹی سی آ یتیں ہیں ان کو ہر نماز کے بعد پڑھے تو آپ ﷺ روزِ محشر اس کی شفاعت فر ما ئیں گے اور دوسرا فائدہ ان دو آیتوں کا یہ ہے۔

کہ اگر کسی بندہ پر کوئی مصیبت پر آ جائے تو ان دو آیتوں کے پڑھنے سے اللہ تعالیٰ وہ مصیبت آ سان فر ما دے گا۔ انشاء اللہ تعالیٰ۔ یہ سورۃ توبہ کی آخری دو آ یتیں ہیں۔ ان کو آپ حفظ کر لیں اور پڑھتے وقت تلفظ کا خاص خیال رکھیں۔ کیونکہ تلفظ میں غلطی کی وجہ سے پورا معنی تبدیل ہو جاتا ہے۔ ان آ یتوں کو غور سے سن لیں۔

جو کوئی ان آیتوں کو ہر نماز کے بعد ایک مرتبہ پڑ ھا کرے تو انشاء اللہ روزِ محشر جناب ِ رسولِ مقبول ﷺ اسکی شفاعت فر ما ئیں گے اور جس مصیبت او مہم کیلئے چاہے پڑھے ۔ انشاء اللہ تعالیٰ مصیبت آ سان ہو جائے گی۔اس مرتبہ حج پر مجھے منیٰ میں ایک خاتون نے ہر مشکل کے حل کیلئے مرتبہ بِسْمِ اللہِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِیْم پڑھنے کیلئے بتایا۔ جب بھی مجھے کوئی مشکل یا مجھ پر مصیبت آتی ہے تو میں یہ عمل کرتی ہوں اللہ کے فضل سے مشکلیں ختم اور مصیبتیں ٹل جاتی ہیں۔

رزق میں برکت کیلئے مجرب عملرزق میں ترقی اور برکت کے لیے یا کوئی کام جو بس سے باہر ہو اور کوئی وسیلہ نظر نہ آتا ہو یا کسی کام میں آسانی اور جلدی مطلوب ہو تو سورۂ مزمل ایک بیٹھک میں 41 مرتبہ 3 دن تک پڑھیں۔ انشاء اللہ مقصد میں کامیابی ہوگی۔کامیابی و کامرانی کیلئےفجر کی نماز کے بعد سورۂ یٰسین‘ سورۂ مزمل اور سورۂ فجر پڑھیں۔ ظہر کی نماز کے بعدسورۂ فتح پڑھیں۔ عصر کی نماز کے بعد سورۂ بینا پڑھیں۔

مغرب کی نماز کے بعد سورۂ واقعہ پڑھیں۔ عشاء کی نماز کے بعد سورۂ سجدہ ‘ سورۂ ملک‘ سورۂ بقرہ اور آل عمران کا آخری رکوع پڑھیں۔انشاء اللہ ہر کام میں کامیابی و کامرانی ہوگی۔کامرانی دین کی دعامیرےپیارے نانا جان نے ایک کتاب ’’صدا حادیث‘‘ مولانا محمد صادق سیالکوٹی کی‘ مجھے بچپن میں پڑھنے کیلئے دی تھی‘ میں صبح و شام کی دعائیں اس سے پڑھتی ہوں۔

درج ذیل دعا کو مسلسل پڑھنے سے اللہ تعالیٰ نے میرے نفس کو بالکل زیر کردیا ہے۔ہروقت لڑائی جھگڑا مجھ میں بہت زیادہ تھا‘ ہر بات پر بحث کرنا اوربرداشت نہ کرنا‘ ہروقت کچھ نہ کچھ معاملہ لگا رہتا تھا۔ اب اللہ تعالیٰ کے فضل وکرم اور اس دعا کے پڑھنے سے طبیعت بہت بدل گئی ہے۔

اول تو ضرورت ہی نہیں پڑتی کہ کسی جھگڑے یا بحث میں آؤں اگر خدانخواستہ کچھ ہوجائے تو فوراً ندامت ہوجاتی ہے۔ دوسرے بندے سے اورفوراً اللہ تعالیٰ سے معافی مانگتی ہوں۔ اپنے بچوں کو اور دوسروں کو بھی پڑھنےکیلئے کہتی ہوں۔ اس رسالے کے ذریعے چاہتی ہوں کہ ہر عبقری کے قاری کے گھر میں یہ دعا پڑھی جائے تاکہ ہم سب اپنے نفس کی برائی سے محفوظ رہیں۔ یہ دعا خاص کر آج کل کے نفسا نفسی کے دور میں ہر شخص کو یاد کرنی چاہیے۔

Leave a Comment