رمضان دوسرے ہفتہ کی شب کا خاص وظیفہ۔ چار رکعت نفل اس طرح پڑھیں۔

Ramzan k doosray hafty ki shab ka khas wazefa

آج ہم آپ کو جمعہ اور ہفتہ کی درمیانی شب کا خاص وظیفہ بتانے والے ہیں جو کہ بہت لا جواب وظیفہ ہے یہ وظیفہ دعا کی قبولیت کے حوالے سے بہت مفید ہے اور اس کے وسیلے سے اللہ کی ذات سے جو بھی مانگا جا تا ہے وہ اللہ عطا کر تا ہے یاد رہے کہ جب آپ کی دعا قبول ہو گی تو ظاہر ہی سی بات ہے کہ آپ دعا میں جو بھی مانگو گے وہ ملے گا۔ جو پورا نہیں ہو رہا آپ کا مقصد تو اس وظیفے کی بر کت سے انشاء اللہ وہ مقصد آپ کا پورا ہو جا ئے گا اس عمل کو لازمی کر یں۔

اسی طرح اگر آپ کو مسائل کا سامنا یا پھر آپ مشکلات میں پھنسے ہو ئے ہیں تو اس وظیفے کے ذریعے مسائل اور مشکلات کو اللہ کی ذات سے حل کروائیں یہ خاص وظیفہ ہے اسے مس مت کیجئے گا یہ وظیفہ کیسے کر نا ہے اس حوالے سے مکمل تفصیل جاننے کے لیے ہمارے ساتھ رہئیے ۔

ہم آپ کو آج کے موضوع کے حوالے سے تفصیل بتائیں گے لیکن ا س سے پہلے آپ سے درخواست ہے کہ اگر آپ نے میری ان باتوں کو نہ سنا تو آپ کو نقصان ہو سکتا ہے تو میں چا ہتا ہوں۔کہ آپ میری باتوں کو بہت ہی زیادہ غور سے سنیں تا کہ اس وظیفے سےآ پ کو بہت ہی زیادہ فائدہ حاصل ہو سکے۔

سب سے پہلے تو آپ کو یہ بتاتے چلیں کہ ہمارا آج کا وظیفہ جو جمعہ اور ہفتہ کی درمیانی شب کےساتھ ہے یہ وظیفہ سورۃ اخلاص کا وظیفہ ہے اسی لیے اس وظیفے کی تفصیل میں جانے سے پہلے میں آپ کو اس سورۃ کے فضائل بتا تا ہوں یا در ہے کہ نبی ﷺ کی نگاہ میں اس سورۃ کی بہت اہمیت تھی آپ لوگوں کو اکثر بتا یا کر تے تھے کہ یہ سورۃ تہائی قرآن کے برابر ہے صحابہ کرام سے ایک مر تبہ رسول اللہ ﷺ نے فر ما یا جلدی جمع ہو جاؤ میں ابھی تمہارے سامنے تہائی قرآن کی تلاوت کروں گا۔

بہت سے لوگ جمع ہو گئے اور آپ ﷺ ہجرہ مبارک سے با ہر تشریف لا ئے اور سورۃ اخلاص کی تلاوت فرمائی اور واپس لوٹ گئے ہم ایک دوسرے سے گفتگو کرنے لگے کہ آپ ﷺ نے تو فر ما یا تھا میں تمہارے سامنے تہائی قرآن کی تلاوت کر وں گا شاید آسمان سے کوئی وحی نازل ہو گئی ہے۔

تھوڑی دیر بعد حضور ﷺ با ہر تشریف لا ئے اور ارشاد فر ما یا میں نے تمہیں کہا تھا کہ میں تمہارے سامنے تہائی قرآن کی تلاوت کروں گا ذرا غور سے سنو یہ سورۃ تہائی قرآن کے بر ابر ہے نبی کریم ﷺ نے ارشاد فر ما یا قسم ہے مجھے اس ذات کی جس کی قبضہِ قدرت میں میری جان ہے سورۃ اخلاص تہائی قرآن کے برابر ہے تو اس کا وظیفہ بھی بہت خاص ہے۔

Leave a Comment