ایک ایسااسم اعظم جو عامل آپ کو نہیں بتاتے

Aik aisa isam aazam jo aalim apko nai btatay

انسان ہمیشہ سے کسی ایسے عمل اور وظیفے کی تلاش میں رہتا ہے جو نہایت آسان بھی ہو اور اس کے لئے اسکو چلّوں اور دوسری مشقتوں کی بھی ضرورت نہ پڑے تو ہم آپ کو یہ بتاتے ہیں کہ ہر ایک وہ مسلمان جو خلوص نیت سے اللہ کریم کے اسمائے مبارکہ میں سے کسی کا بھی ذکر وتسبیح کرتا ہے اور لگاتار تسبیحات میں مصروف رہتا ہے اس پر زمانے کی مشکلات اس طرح نہیں ٹوٹ کر گرتیں جیسے دوسروں پر۔وہ اللہ کی پناہ میں رہتا ہے۔

کمزور انسان جس پر دنیا مالی و اخلاقی طور پر ظلم کرتی ہے،اسکا معاشرے میں کوئی سجن نہیں ہوتا تو وہ اللہ کریم کے اسم مبارکہ یا مھیمن کا روزانہ پانچ ہزار بار ذکر کیا کرے،اوّل آخر درود پاک کے ساتھ ۔یا مھیمن میں ہیبت ،جلال اور تسخیر کی ایسی قوت پائی جاتی ہے کہ ہر کوئی اس کے ذاکر کے ساتھ نرم رویہ اختیار کرتا ہے۔ اگر کسی کو معلوم ہوجائے کہ یا مھیمن کی قوت اور خاصیت کیا ہے تو وہ ساری زندگی یا مھیمن کا ذکر کرتے بسر کردے ۔ایسا انسان نیک نیت ہواور جائز کام کرنا چاہتا ہوتو اسے یا مھیمن کا ذاکرو عامل بنناچاہئے۔دنیا کو فتح کرنے کی تمنا بہت سے لوگوں میں پائی جاتی تھیں ، اور اس لیے وہ دولت اور طاقت کا بے دریغ استعمال بھی کرتے ہیں ۔

لیکن ایسی فتح ، بالادستی کا کیا فائد ہ جو انسان کو تکبر میں مبتلا کیے رکھے ۔ دنیا میں بالادستی اور دوسروں کے دلوں کو اپنی محبت کی طاقت سے تسخیر کر کے اچھے کام کر نا نیک کام ہے ۔ جو لوگ اچھائی کی نیت رکھتے ہیں وہ اسم پاک یا مھیمن کا ورد کیا کریں ، اس مین دنیا اور دلون کو تسخیر کرنے کی نے پناہ قوت پائی جاتی ہے ۔ایسا جامع الصفات اسم ربی ہے کہ کوئی بھی انسان اسکی خصوصیات جان لے تو ساری زندگی یا مھیمن کا ورد جاری رکھے ۔

اس کے عمل سے دشمن خوف محسوس کرتے ہیں ،اس کا رعب ودبدبہ ہر شخص کے دل میں بیٹھ جاتا ہے اور اس کے سامنے سخت سے سخت دل کے لوگ بھی موم بن جا تے ہیں ۔ صوفیا کرام بتاتے ہیں کہ اس کا عامل اگر کسی حاکم کے آگے جا کر فریاد کرے اور انصاف کا طالب ہو تو حاکم اس کا استقبال یاں کرتا ہے جیسے کسی بادشاہ کا کیا جاتا ہے ۔ چالیس دن اس اسم پاک کو 313 مرتبہ اول وآخر سات مرتبہ درودشریف کے ساتھ پڑھنے سے دشمن دوست بن جاتے ۔ ظالم اپنی ہیبت کھو بیٹھتے ہیں ، پاکیزگی اور نیت کا درست رہنا لازم ہے۔اللہ ہم سب کا حامی وناصر ہو۔آمین

Leave a Comment