ہر گناہ کے پیچھے شیطان نہیں ہوتا یہ ہی بتانے رمضان آتا ہے رمضان کی کچھ خوبصورت باتیں

Her gunah k peechy

آخرت میں نیکیوں کو گنا نہیں بلکہ تولا جائے گا اس لیے اچھا اعمال کی تعداد کو نہیں بلکہ ان کے معیار پر دھیان دیں۔ غم اور مشکلات صرف اللہ کو بتایا کرو ۔ اس یقین کے ساتھ کہ وہ تمہیں جواب بھی دے گا اور تمہاری تکلیف بھی دور کرےگا۔ کچھ نیکیاں ایسی بھی ہونی چاہیے جن کا اللہ کے سوا کوئی گواہ نہ ہو۔ سب کچھ اپنے رب پر چھوڑ دیتا ہوں اس لیے اتنا مطمئن رہتا ہوں۔ گناہ کے دوران مو ت نہ آنا اور گناہ کے بعد ت وبہ کی مہلت ملنا اللہ تعالیٰ کا بڑا احسان ہے۔

انسان کی طاقت اور بساط صرف اتنی ہے کہ وہ سانس لینے پر بھی اللہ کی مرضی کا محتاج ہے۔ جن کو یہ علم ہوجائے کہ اللہ تعالیٰ بہت غور سے سنتا ہے پھر وہ اپنی کہانی کسی اور کو نہیں سناتے۔ جو اللہ تعالیٰ کےدیے ہوئے رزق کو کافی سمجھے وہ زندگی میں کبھی بھی کسی کا محتاج نہیں ہوسکتا۔ہمارے مانگنے میں کمی ہوسکتی ہے۔ اللہ کے دینے میں نہیں۔ اللہ تعالیٰ جو آپ کو نہیں دے رہا ہے اس پر شکوہ کرنے کے بجائے اپنے دامن کو دیکھیں کہ جو نعمتیں آپ کو دی گئی ہیں کیا آپ اس کے لائق اور حقدار ہیں۔

نہیں مانگنا آتا تو صرف ہاتھ پھیلا دو ۔ وہ بند لبوں کی بولیا ں بھی سنتا ہے۔ زندگی میں وہ لوگ ہمیشہ پرسکون رہتے ہیں جو پوری نہ ہونے والی خوہشوں سے زیادہ ان نعمتوں پر شکر کرتے ہیں جو انہیں اللہ تعالیٰ نے عطا کی ہیں۔اللہ پر ہمیشہ بھروسہ رکھو کیونکہ اللہ وہ نہیں دیتا جو ہمیں اچھا لگتا ہے بلکہ وہ دیتا ہے جو ہمارے لیے اچھا ہوتا ہے۔ اللہ والوں سے تعلق رکھو طبیعت ٹھیک رہے گی یہ وہ حکم ہیں جو لفظوں سے علاج کرتےہیں۔

صرف اللہ کی ذات ایسی ہے جو معافی مانگنے پر یہ نہیں پوچھتا کہ غلطی کیوں کی تھی۔ ہمیں ہر حال میں اللہ کا شکر ادا کرنا چاہیے کیونکہ جو کچھ آج ہمارے پاس ہے کوئی اور اس کی تمنا کرتا ہے۔ نس نس سے واقف ہے رگ رگ جانتا ہے مجھ کو مجھ سے بہتر میرا رب جانتا ہے۔

Leave a Comment