رمضان المبارک 2021ء کا چاند نظرآتے ہی سب لوگ یہ ایک کام ضرور کریں

Ramzan-ul- mubarik 2021 ka chand nazer aaty hi

آپ وظیفے کو اچھی طرح سے سن لیں۔ اور سمجھ لیں کہ آپ نے یہ وظیفہ کرنا کس طریقے سے ہے؟ آپ کو جب رمضان المبارک کا چاند نظر آجائے یا پھر چاند نظر آنے کی بشار ت مل جائے ۔کیونکہ بعض اوقات ایسے موسم ہوتا ہے کہ چاند کے آگے بادل آجاتے ہیں اور بندہ اس چاند کو دیکھ نہیں پاتا۔ لیکن پھر اس کے بعد میں اطلاع مل جاتی ہے کہ چاند نظر آگیا ہے ۔ تو اگر آپ کو چاند نظر آجائے تو بہت اچھی بات ہے۔

اگر آپ کو چاند نظر نہ آئے بلکہ جس وقت چاند نظر آنے کی اطلاع ملے ۔ تو آپ نے سب سے پہلے وضو کرنا ہے۔ وضو کرنے کے بعد اللہ تعالیٰ سے دعا مانگنی ہے کیونکہ نبی کریم ﷺ جب بھی نئے مہینے کے چاند کودیکھتے تو وہ اللہ کے ہاں ضرور دعامانگا کرتے تھے ۔ یا میرے پروردگار یہ مہینہ ہمارے لیے بہترمہینہ بنا دے ۔آپ نے اسی طریقے سے اپنے الفاظ میں دعامانگنی ہے۔ دعا مانگنے کے بعد آپ نے تنہائی میں بیٹھ جانا ہے۔

اور تین مرتبہ سورت فتح پڑھنی ہے۔ اب سورت فتح کی اتنی زیادہ فضیلت ہے کہ جب آپ تین مرتبہ “سور ت فتح ” پڑھ کر اللہ کے ہاں دعا مانگیں گے تو آپ کی جو بھی حاجت ہوگی اور جو بھی نیک دلی مراد ہوگی اللہ تعالیٰ آپ کی اس حاجت اور اس مراد کو ضرور پورا فرمائےگا۔ پوری رات آپ کےپاس ہے۔ پوری رات میں جب بھی آپ کو وقت ملے اس وقت آپ نے یہ وظیفہ پڑھ سکتے ہیں۔ یہ کوئی پابندی نہیں ہے کہ جونہی چاند دیکھنا ہے اسی وقت وظیفہ پڑھنا شروع کردینا ہے ۔

آپ پوری رات میں جو وقت ملے اس میں یہ وظیفہ پڑھ سکتے ہیں۔ اس کی کوئی پابند ی نہیں ہے۔ یہ وظیفہ حاجت کے لیے ہے۔ یہ پریشانیوں کے لیے ہے۔ پورا مہینہ اللہ تعالیٰ کی رحمت آپ پر موسلا دھار بارش کی طرح برستی رہے گی۔ رمضان المبارک ایک ایسا مہینہ ہے جس میں اللہ تعالیٰ کی رحمت برستی رہتی ہے۔ اور سرکش شیاطین کو زنجیروں کے اندر جکڑ دیا جاتا ہے۔ تاکہ بندہ اپنے رب کی عبادت کو خشو ع وخضو ع سے کرے ۔

اللہ تعالیٰ سے اپنے گن اہوں کی معافی مانگے ۔ تو بہ و استغفار کرے ۔اللہ پاک مع اف کرنے والا ہے وہ تو خود اپنے بندے کو پکار کرکہتا ہے کہ اے میرے بندے ! تومجھے سے مانگ میں تجھے عطاکروں۔تیرے گنا ہ اگر سمند ر کی جھاگ کے برابر ہیں ۔ اگر تیرے گن اہ درختوں کے پتوں کے برابر ہیں۔ تیرے گن اہ اگر بارش کے قطروں کے برابرہیں۔ تو سچے دل سے میرے آگے ت وبہ کر ۔ میں تیری ت وبہ کو قبول کروں گا۔

میرے تمام اگلے پچھلے گناہوں کو معاف فرمادوں گا۔ جب ایک گناہ گا ر بندہ اللہ کے حضور توبہ کرتا ہے سچے دل سے توبہ کرتا ہے تو اللہ تعالیٰ چالیس دن کے لیے مشرق سے لے کر مغرب تک ، شمال سے لے کر جنوب تک تما م قبرستانوں سے عذا ب کو اٹھا لیتے ہیں۔ اتنی زیادہ فضیلیت ہے توبہ و استغفار کی ۔ تو ماہ رمضان میں آپ نے یہ ایک کام بھی کرنا ہے کہ کثرت کے ساتھ تو بہ و استغفار کرتے رہنا ہے۔

Leave a Comment