مشکل ترین حاجات کا سوفیصد حل

her namaz k baad

بسم اللہ الرحمٰن الرحیم۔۔۔

السلام علیکم ،امیدہےآپ خیریت سے ہوں گےاورہماری دعابھی ہےکہ اللہ کریم،آپ کوسدا عافیت کے سائے میں رکھے۔  ناظرین  کرام۔۔۔اس وقت پوری دنیا معاشی بحران کی لپیٹ میں ہیں ہے خاص کر مسلمان زبوں حالی کا شکار ہیں اس کی بنیادی وجہ یہ ہے کہ ہم لوگوں نے خالق کائنات رازق ارض وسما وات عزوجل کے پسندیدہ دین سے اپنا تعلق منقطع کرلیا ہے اور اس کے پیارے رسول صلی اللہ علیہ وسلم کے مقرر کردہ اصول و قواعد سے منہ موڑ کر دشمنان اسلام کے بنائے ہوئے قانون کو گلے لگا لیا ہے

تو جب ایسے کرتوت ہونگے تو نتیجہ یہی آنا ہے حالانکہ اسلام ایک مکمل دین ہے اسلام نے زندگی گزارنے کے ہر شعبہ کو بیان فرمایا ہے کسی بھی گوشہ کو خالی نہیں چھوڑااگر بیماری ہے تو اسکاعلاج بھی بتایا اگر زندگی میں مشکلات ہیں تو انکا حل بھی بتایا ہے۔ مشکل ترین حاجات کا سوفیصد حل بتاؤں گا بلکہ اس عمل کے ساتھ حضرت شاہ عبد العزیز محدث دہلویؒ کے شاگرد خاص حضرت مفتی الٰہی بخشؒ کا بار ہا کا آزمایا ہوا نہایت مجرب وظیفہ بھی آپ کے ساتھ شئیرکروں گا

یعنی  ایک عظیم عمل جس کا ذکر ہر کتاب میں درج ہے اور جس کے حقائق کا قرآن بھی گواہ ہے۔ جس کو اگر اسم اعظم کہا جائے تو بجا ہے۔ اور ہے بھی اسم اعظم۔قرآن کو شروع بھی اسی پر کیا جاتا ہے اور اختتام بھی اسی پر ہے۔انسان کو اس فانی دنیا میں ہر قسم حاجت درپیش ہوتی ہے۔اور مختلف قسم کے آفات سے انسان کا واسطہ پڑتا ہے۔جن سب کا حل صرف اسی ایک اسم اعظم میں پوشیدہ ہے۔

اگر کوئی بھی انسان اس کو اپنا معمول کا ورد بنا لے تویہ عمل  دوسرے اعمال سے انسان کو بے نیاز کر دیتا ہے۔حاجت چاہے کتنی ہی بڑی کیوں نہ ہو اور کیسی ہی ناممکن کیوں نہ ہو انشاء اللہ اس کے سامنے سب ایک ذرہ برابر ہے۔گھریلوں پریشانیاں ،دفتری معاملات،پسند کی شادی۔دشمن سے جان چھڑانا چاہے وہ کتنا طاقتور کیوں نہ ہو اور اس کے پاس افراد کے ساتھے ساتھ پیسے بھی ہوں اور ہتھیار بھی لیکن اس اسم اعظم کی برکت سے اگر آپ ایک بھی ہے تو انشاء اللہ دشمن اپنے جال میں خود پھنس جائے گا۔

جہاں آپ شادی کرنا چاہتے ہو ں اور وہاں کے کچھ لوگ انکاری ہو تب بھی یہ عمل ایک تیر بے خطا ہے۔اور اگر آپ کے اپنے گھر والے نہیں مان رہے تب بھی یہ ایک انمول عمل ہے۔رزق کی برکت اور بندش کے لئے بھی اس میں کمال درجہ کا اثر ہے اور ملازمت ملنے اور ملازمت میں ترقی کرنے کا بھی 100 فی صد مجرب عمل ہے۔مطلب دنیا کا کوئی کام ایسا نہیں جس کہ لئے آپ یہ عمل کریں گے اور وہ کام نہیں ہوگا۔

ناظرین کرام عمل پیش کرنے سے پہلے چند ضروری ہدایات نوٹ فرما لیں کہ یہ عمل آپ صرف نئے چاند کی پہلی جمعرات کو ہی شروع کرستے ہیں یا پھر جمعہ کو۔ اس عمل کے دوران جھوٹ،غیبت اور فلموں گانوں کی بالکل چھٹی کرنی ہوگی۔تاکہ آپ جو عمل کر رہے ہیں اس میں آپ کی کامیابی یقینی ہو۔ اب عمل کو سمجھیں کہ جمعرات یا جمعہ کی رات سے روزانہ اول و آخر 21۔21 بار درود ابراھیمی اور درمیان میں 786 بار بسم اللہ الرحمن الرحیم پڑھنا ہے۔

یہ عمل 21 دن تک جاری رکھنا ہے اور تصور ہر حال میں اپنے مطلب کا رکھنا ہے کہ یہ میں اس کام کے لئے پڑھ رہا ہوں۔ انشاء اللہ اس کے اثرا ت 7 دن سے شروع ہو جائیں گے۔ عمل شروع کرنے کے بعد کسی سے عمل کا تذکرہ نہ کریں کہ میں فلاں عمل کر رہا ہوں ۔انشاء اللہ 21 دن سے پہلے پہلے آپ کی مراد رب کائنات اپنی فضل سے پوری فرمادے گا۔چاہے آپ کتنے ہی گناہ گار یا کمزور ہوں۔

اور روزانہدن میں کسی بھی وقت کوئی سا بھی درود شریف300 بار لازمی پڑھنا ہے  بلکہ مختصر درود یہ ہےکہ ( محمدصلی اللہ علیہ و آلہ و سلم)اس عمل کے ساتھ حضرت شاہ عبد العزیز محدث دہلویؒ کے شاگرد خاص حضرت مفتی الٰہی بخشؒ کا بار ہا کا آزمایا ہوا نہایت مجرب عمل ہے بھی نوٹ فرمالیں۔ اس کے پڑھنے سےنہ صرف بلائیں  دورہوتی ہیں بلکہ  حاجات بھی پوری ہوتیہیں  اور خدا تعالیٰ کی معرفت اور اس کی محبت بھی نصیب ہوتی ہے، جس کے نتیجے میں نیکی کرنا اور گناہ سے بچنا بہت آسان ہو جاتا ہے۔

کسی بھی ماہ کا نیا چاند دیکھنے کے بعد پہلے جمعہ سے مستقل سات دن تک تر کیب کے مطابق روزانہ دن میںیا رات میں ایک وقت اور جگہ متعین کر کے پابندی کے ساتھ حق تعالیٰ کے ان مبارک ناموں کا وظیفہ پڑھیں ، اگر کسی مجبوری سے جگہ اور وقت کی تبدیلی ہو جائے، تو کوئی حرج نہیں ہوگا۔ اگر کسی کو بدرجہ مجبورییہ عربی دعا یاد نہ ہو سکے تو اس کا اردو ترجمہ ہیپڑھ لے،وہ بھی  محروم نہ رہے گا۔

جمعہ کے دن ’’یا اﷲیا ھو‘‘ ایک ہزار مرتبہ پڑھیں۔ اور  ہفتہ کے دن ’’یا رحمن یا رحیم‘‘ ایک ہزار مرتبہ پڑھناہے۔ اسی طرح اتوار کے دن ’’یا واحد یا احد‘‘ ایک ہزار مرتبہپڑھیں۔پیر کے دن ’’یا صمد یا وتر‘‘ ایک ہزار مرتبہپڑھیں۔ منگل کے دن ’’یا حییا قیوم‘‘ ایک ہزار مرتبہپڑھیں۔ بدھ کے دن ’’یا حنان یا منان‘‘ ایک ہزار مرتبہپڑھیں پھرجمعرات کے دن ’’یا ذا الجلال والاکرام‘‘ ایک ہزار مرتبہاور جمعہ کے دن بعد نمازِِ جمعہ کم از کم تین مرتبہ یہ دعا مانگیں کہ  خدایا! میں آپ سے درخواست کرتا ہوں ان عظیم اور مبارک ناموں کے واسطے سے کہ آپ رحمت بھیجئے حضرت محمدؐ پر اور آپؐ کی پاکیزہ آل پر اور سوال کرتا ہوں یہ کہ مجھے شامل فرمالے اپنے مقرب اور نیک بندوں میں۔

مجھے یقین کی دولت عطا فرما، دنیاوی امراض، مصیبتوں اور آخرت کے عذاب سے اپنی امان میں رکھ۔ ظالموں اور دشمنوں سے میری حفاظت فرما، ان کے دلوں کو پھیر دے۔ ان کو شر سے ہٹا کر خیر کی توفیق عنایت کرنا، آپ ہی کے اختیار میں ہے، خدایا میری اس درخواست کو قبول فرما، یہ میری صرف ایک کوشش ہے، بھروسہ اور توکل آپ ہی پر ہے۔ ناظرین کرام  بندہ عاجز کی ادنیٰ رائے یہ ہے کہ جس مقصد کے لئے پڑھا جائے،

اس کی نیت کر لی جائے اور جب تک وہ مقصد پورا نہ ہو، لگاتار ہر ماہ کے پہلے جمعہ سے سات دن کرتے رہیں، مجرب اور اکسیر عمل ہے، یقین محکم ہونا ضروری ہے۔ کسی نا گہانی آفت یا مصیبت کے درپیش ہونے کے وقت چاہے وہ مصیبت فصلوں پر، باغات پر یا جانوروں پر آئی ہو یا انسانوں پر آئی ہو، اس مصیبت کے دفع کے نیت کر کے یہ عمل کیا جاسکتا ہے۔ ہمارے بزرگوں کا عمل ہے۔ دعا ہے حق تعالیٰ پڑھنے والے کا عمل قبول فرمائے۔آمین ثم آمین

Leave a Comment