دل کی تین خواہشات کو پورا کرنے کے لیے اللہ الصمد کا وظیفہ۔

Dil ki teen khawahishat ko poora kerny k liye wazeefa

بسم اللہ الرحمٰن الرحیم۔۔۔
السلام علیکم ،امیدہےآپ خیریت سے ہوں گےاورہماری دعابھی ہےکہ اللہ کریم،آپ کوسدا عافیت کے سائے میں رکھے۔ ناظرین کرام۔۔۔کیا آپ پریشان ہیں…؟؟ کیا آپ سخت ذہنی اذیتوں میں گرفتار ہیں…؟؟ کیا آپ کسی تکلیف اور مصیبت میں مبتلا ہیں…؟؟ کیا آپ کے دل و دماغ پر پہاڑوں جیسے بوجھ پڑے ہوئے ہیں…؟؟ کیا آپ کسی دینی یا دنیاوی پریشانی میں گِھر چکے ہیں اور کوئی حل نظر نہیں آرہا…؟؟ کیا آپ کسی سخت بیماری میں مبتلا ہیں اور شفاء یابی نہیں ہو رہی…؟؟

کیا آپ کی بیوی اور اولاد نافرمان ہے اور ان کی وجہ سے آپ سخت ڈپریشن کا شکار ہیں…؟؟ کیا آپ اولاد سے محروم ہیں اور ہر قسمی علاج کے باوجود کچھ نہیں بن پا رہا…؟؟ کیا آپ اپنی اولاد کے رشتوں کے بارے میں پریشان ہیں…؟؟کیا آپ کاشتکار ہیں اور بے وقت کی بارشوں سے ہونے والے نقصانات سے پریشان ہیں…؟؟کیا آپ معاشی پریشانیوں کا شکار ہیں…؟؟
کیا آپ رزق کی تنگی، بے برکتی اوربھوک و افلاس کا شکار تو نہیں…؟؟ اگر نہیں…تو دل سے کہیے! ’’الحمدللہ‘‘ اللہ کا شکر ادا کیجئے…

اوربار بار اداء کیجئے… لیکن اگر خدا نخواستہ ان حالات کا شکار ہیں… تو گھبرانے کی بالکل ضرروت نہیں… ان سب مسائل کا کافی شافی اور اتھینٹک حل موجود ہے…کیونکہ ہر شخص اس کا متلا شی ہے کہ اس کے ہر مسئلے کا حل نکالنے کے لیے کوئی کنجی ہو جو اسے بھی کا میابی کا را ستہ دکھا دےہم آپ کو یک ایسی آیت کا وظیفہ بتا نے جا رہے ہیں جو آپ نے دل کی تین خواہشات کو پورا کرنے کے لیے پورے 7 دن تک پڑھناہے کیونکہ اس میں کوئی شک نہیں کہ … وظیفے اگر شریعت کے مطابق ہوں تو اُن سے فائدہ ہوتا ہے…

اللہ کا ذکر، اللہ کا نام، اللہ کا کلام… اور اللہ تعالیٰ سے دعاء… اس میں فائدہ ہی فائدہ ہے۔ لہذا آج کے اس مجرب وظیفہ سے اللہ رب العزت ان تمام مسائل کو حل فرما دیں گے اور خزانہ غیب سے رزق عطا فرما ئیں گے۔ اور تمام پر یشانیوں سے چھٹکا را عطا فرما ئیں گے ۔عزیز خواتین وحضرات،صمداللہ تعالیٰ کے صفاتی ناموں میں سے ایک نام ہے۔ الصمد کے معنی سردار،ر ب،بے نیاز، غیر محتاج کے ہیں۔الصمدوہ ہوتا ہے۔

جو نہ کسی کی اولاد ہو اور نہ جس کی کوئی اولاد ہو،الصمد، وہ ہوتا ہے۔ جو کسی کا محتاج نہ ہو اور ہر چیز اس کی محتاج ہو،الصمدعظمت والے سردار کو کہتے ہیں جو اپنے علم، حکمت و حلم، قدرت، عزت اور سب صفات میں با کمال ہو۔ تمام مخلوقات جس کی محتاج ہوں اور کائنات میں بسنے والی تمام اشیاء اپنے تمام معاملات میں اس کی کلی محتاج ہوں اور مصائب و آفات میں اسی کو پکارتی ہوں کیونکہ سب کو معلوم ہے کہ وہی ان کا حاجت روا اور مشکل کشا ہے اور وہی ان کی پریشانیاں اور کرب والم سےنجا ت دے سکتا ہے ۔

کیونکہ اس کا علم، کامل و اکمل ہے اور اس کی رحمت واسع ہے۔ اس کی شفقت، مخلوق کے ساتھ محبت، لامحدود ہے۔ اس کی قدرت و سلطنت عظیم ترین ہے۔اللہ الصمد کےاس عمل کو کر نے کا طریقہ یہ ہے کہ دل کی تین خواہشات کو پورا کرنے کے لیے آپ لوگ پورے 7 دن تک اللہ ھو صمد چلتے پھرتے پڑھتے رہیں اور روزانہ بعد نماز عشاء 2 رکعت نماز نفل شکرانے کی نیت سے پڑھیں گے۔پہلے 2 دن جو خواب آئے گا اس میں آپکی دعا کی قبولیت کا اشارہ ھوگا۔

یہ عمل صرف وہ لوگ کر سکتے ھیں جن کو لگتا ھے کہ ہماری دعا قبول نہیں ھوتی اور وہ اپنے رب کی بڑائی بیان کرنے میں بہت پیچھے رہ گئے ہیں۔… میرا تجربہ ہے کہ جب کوئی حاجت وغیرہ پیش آئے تو دو رکعت نماز ادا کر کے… سورہ اخلاص کی آیت اللہ الصمد توجہ سے پڑھ لیں… اول آخر سات سات بار درود شریف… اس کے بعد اپنی حاجت مانگی جائے تو… ماشاء اللہ عجیب طرح سے قبولیت آتی ہے… بس یوں سمجھیں کہ زندگی ہی آسان ہو جاتی ہے… دو رکعت نماز میں سب کچھ آجاتا ہے…

پھر درود شریف قبولیت کی چابی ہے پھر سورہ اخلاص کی آیت … وہ تو عظمت کا مینار ہے… محبوب کلمات کا پر تاثیر مجموعہ ہے… اور اس میں اخلاص ہی اخلاص ہے… یعنی بندہ خالص ایمان پر آ جاتا ہے … خالص توحید پر آ جاتا ہے… اب اس کے بعد دعاء مانگیں تو اس میںتاثیر تو ہو گی۔ اور جو شخص یہ چاہے کہ اس کے کا رو با ر میں خیر و بر کت اور رزق میں وسعت ہو تو وہروزانہ ایک ہزار مر تبہ اللہ الصمد پڑھے، انشا ءاللہ دنیاوی دولت حاصل ہو گی اور کبھی خالی جیب نہ رہیگا ۔

اور اگر کوئی دنیا کے مکر و فریب اور دھندو ں میں مبتلا ہو اوراس سے چھٹکا را پا کر سکونِ قلب چاہتا ہو تو اسے جمعرات اور جمعہ کی درمیانی شب میں سار ی رات ہی پڑھے ،عجیب فرحت اور سکون محسو س ہو گا (ان شاءاللہ )۔ اور جو ہر نماز کے بعد 33 مرتبہ اللہ الصمد پڑھے گا وہ اجرِ عظیم پا ئے گا ۔ دنیا اس سے پیا ر کرنے لگے گی ۔ جو شخص تہجدکے وقت 500 مر تبہ پڑھےگا وہ دین و دنیا میں سکھ اور راحت پائے گا، اور انشا اللہ پریشانیا ں اس سے دور رہیں گی ۔

یاد رکھیں اللہ الصمد پڑ ھنے سےظاہر ی اور باطنی سچائی نصیب ہو گی بلکہ ولا یت کا مقام صدیقیت بھی اس اسمِ اعظم سے حاصل ہو تاہے ۔ ” اللّٰہ الصمد “ پڑھنے سے انسان مخلو قِ خدا سے بے نیا ز ہو جا تا ہے اور دین و دنیا حاصل ہو جا تے ہیں اس کے باطنی اسرار بے پنا ہ ہیں ۔ رسول اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کی حضوری اس سے حاصل ہوتی ہے ۔ جنت ، دوزخ ، ارض وسما کی روحانی سیر اور مشا ہدا ت اس سے حاصل ہو تے ہیں ۔

حتی کہ یہی اسم، اللہ کے خاص بندو ں کو مقامِ وصل ، فنا اور بقا کی منا زل عبور کر وادیتا ہے ۔ ”اللّٰہ الصمد “ کے ورد سے عام لو گو ں کو بھی بے شمار فیوض و بر کا ت حاصل ہوتے ہیں ۔دوستو جب بھی کوئی وظیفہ اختیار کریں تو مستقل مزاجی اور پابندی کے ساتھ کریں۔ ایک چھوڑ کر دوسرا اور دوسرا چھوڑ کر تیسرا کرنا بھی نفع مند ثابت نہیں ہوتا ہے بلکہ اکثراوقات نقصان ہوتا دیکھا گیا ہے۔ محترم ناظرین! یقین کے ساتھ عمل کریں۔

شک عمل کو ضائع کردیتا ہے۔ درحقیقت تمام وظائف اللہ جل شانہٗ کے حضور پیش ہوکر ہمارے حالات اور پریشانیوں میں آسانی اور سہولت لانے کیلئے اجازت چاہتے ہیں۔ اس لیے اللہ جل شانہٗ ہی کی ذات سے ہونے کا سوفیصد یقین ہی فائدہ دے گا۔ یہ وظائف اللہ جل شانہٗ کی مدد حاصل کرنے کیلئے اہل اللہ سے ثابت ہیں۔ ضرورت صرف اس امر کی ہے کہ ہمارے دل نفاق سے پا ک ہو ں اوراخلاص کے ساتھ پڑھا جائے توان شا ءا للہ کبھی ناکا می نہ ہو گی ۔ آزما ئش شر ط ہے ۔

Leave a Comment