ماسٹر وظیفہ۔ ہر مسئلے کا حل صرف ایک لائن یاد کر لیں۔

Master wazeefa, her masly ka hall

بسم اللہ الرحمٰن الرحیم۔۔۔
السلام علیکم ۔۔۔ ،امیدہےآپ خیریت سے ہوں گےاورہماری دعابھی ہےکہ اللہ کریم،آپ کوخیرخیریت کے سائے میں رکھے۔ ناظرین کرام۔۔۔ آپ سب کے لئے پورے سال کے وظائف کا نچوڑ آپ دوستوں، بھائیوں اور بہنوں کے ساتھ شیئر کروں گا۔ انسان کی زندگی میں اتار چڑھاؤ لازمی آتا ہے۔کبھی عروج ہے تو کبھی زوال لیکن وظائف اور اعمال انسان کی زندگی کو آسان بنا دیتے ہیں لہذا آج کا یہ ایک مختصر ترین عمل اللہ کی غیبی مدد حاصل کرنے کیلئے ہے یہ میرا اپنا آزمودہ عمل ہےبلکہ آج اپنی آپ بیتی بھی آپ کے ساتھ شیئر کروں گا ،یہ عمل بدبختی سے بچنے کے لئے، ہر قسم کے گناہوں سے بچنے کیلئے۔

مصیبت اور پریشانی سے بچنے کیلئے بلکہ مشکلات کو ختم کرنے کیلئے اور دعاؤں کی قبولیت کے لئے ہے۔ جسمانی و روحانی معذوری سے بچنے کے لئے بھی یہ عمل کمال کی تاثیر رکھتا ہے۔ یعنی بیماریوں اور آپریشن سے نجات کیلئے، نفسیاتیبیماریوں سے بچنے کے لئے، ڈر خوف بلکہ ذہنی پریشانی کو ختم کرنے کے لئے بھی آپ یہ عمل کر سکتے ہیں بلکہ ازدواجی زندگی میں برکت کیلئے، زندگی میں خوشحالی کے لئے، طلاق اور قطع تعلقی سے بچنے کیلئے ، حصولِ اولاد یا حصولِ رزق و ملازمت یعنی روزگار اور کاروبار کیلئے بھی آپ یہ عمل لازمی کریں ۔

اسی طرح جادو جنات اور اثرات سے حفاظت کیلئے بلکہ ہر بند چیز کھولنے یا بندش کو توڑنے کیلئے بھی یہ سنہری عمل میرا آزمایا ہوا ہے۔بلکہ حاسدین اور دشمنوں سے یقینی حفاظت کیلئے ، گھریلوں جھگڑوں کو خوشیوں میں بدلنے کیلئے۔سخت ترین حا جات پوری کروانے کیلئے ۔ نظر بد سے بچنے کیلئے اور قوت حافظہ کیلئے یا ناممکن کام کو ممکن بنانے کیلئے بھی یہ عمل آپ کا مقصد اللہ کے حکم سے ممکن بناتا ہے۔ مقدر بدلنے کیلئے ۔مشکلات ومعاشی تنگی کو ختم کرنے کیلئے ۔ گھریلو سکون کیلئے ۔

آفات وبلیات سے محفوظ رہنے کیلئے۔شیطانوں کے شر سے محفوظ رہنے کیلئے ۔ جھوٹے اور باطل لوگوں سے محفوظ رہنے کیلئے ۔گھر کی مصیبتوں سے تنگیوں سے نجات کیلئے۔ وسیع رزق، گھر، سواری کیلئے الغرض تمام مقاصد کیلئے روزانہ صبح یا شام کو ایک مرتبہ یہ عمل پڑھ لیں ۔ اللہ کے فضل سے ان مسنون عمل کےپڑھنےسے اگر فائدہ نہ ہوا تو کہنا ضرورناظرین کرام ہمارے والد تاجرتھے۔

ہمارے دادا گاؤں میں رہتے تھے۔ ہمارے والد نے شہر آکر بغیر کسی سرمائے کے خالص اپنی محنت سے کاروبار جمایا۔ ہم پانچ بھائی ہیں۔ میں چوتھے نمبر پر ہوں۔ ہم بھائیوں نے آٹھویں یا میٹرک تک تعلیم حاصل کی۔ جیسے جیسے ہم بڑے ہوتے گئے والد صاحب تجارت سکھا کر ہمیں اپنے ساتھ کام پر لگاتے رہے۔ جس بھائی کی شادی ہوئی اس کے لیے دوکان میں ایک کرسی مخصوص کردی گئی۔ اس طرح وہ والد کی دوکان سے وابستہ بھی رہا اور اس کی علیحدہ کمائی کا بندوبست بھی ہوگیا۔

ہمارے والد صاحب غصے کے تیز ہیں۔ انہوں نے ہمیں ہنر سکھایا، ہمیں اپنے ساتھ کام پر بھی لگایا، لیکن ساتھ میں وہ یہ بھی جتاتے رہتے کہ یہ سب کاروبار میرا جمایا ہوا ہے ۔ میں جب چاہوں تم میں سے کسی کو بھی یہاں سے نکال سکتا ہوں۔ والد صاحب کا یہ رویہ دیکھ کر مجھ سے بڑے دو بھائیوں نے یہاں کام کرتے ہوئے خاموشی سے اپنی اپنی الگ دکان بھی کرلی اور وہاں کاری گروں کو کام پر لگا دیا۔ میری شادی کو دو سال ہوئے ہیں۔

میرا بچہ چھے ماہ کا ہے۔ پچھلے ماہ والد صاحب نے ناراض ہوکر مجھے اپنے کام سے الگ کردیا ۔ وہ کہہ رہے ہیں کہ میں اپنی الگ رہائش کا بندوبست بھی کرلوں۔میرے تو تصور میں بھی نہ تھا کہ میرے والد میرے ساتھ ایسا کریں گے۔ بیوی اور دودھ پیتے بچے کا ساتھ ہے۔ روزگار اور رہائش سے محرومی کے صدمے نے مجھے توڑ کر رکھ دیا ۔ سمجھ میں نہیں آتا تھا کہ کیا کروں؟ میرا قصور یہ ہے کہ میں کبھی کبھار والد کی کسی بات سے اتفاق نہیں کرتا تھا۔

میرے بھائی نے مجھ سے کہا بھی تھا کہ اپنا الگ بندوبست بھی کرکے رکھو لیکن میں ان کی بات ہنس کر ٹالتا رہا۔ کیونکہ اللہ پاک نے مجھے اس عمل سے الگ گھر بھی دے دیا اور میرے گھریلو مسائل بھی ختم فرمادیئے، یہ عمل آپ نے عشاء کی نماز کے بعد 101 مرتبہ سورۃ العنکبوت کی آیت نمبر ساٹھ۔۔۔وَكَاَيِّنْ مِّنْ دَاۗبَّةٍ لَّا تَحْمِلُ رِزْقَهَا ٤اَللّٰهُ يَرْزُقُهَا وَاِيَّاكُمْ ۔ وَهُوَ السَّمِيْعُ الْعَلِيْمُ۔گیارہ گیارہ مرتبہ درودشریف کے ساتھ پڑھ کر اپنے حالات کی بہتری کے لیے اللہ تعالیٰ کے حضور دعا کرنی ہے۔

یہ عمل کم از کم چالیس روز تک جاری رکھیں۔ یقین رکھیے۔ اللہ آپ کو بے سہارا نہیں رہنے دے گا۔پیارے دوستو آپ اس آیت کو زبانی یاد کر لیجئے کیونکہ یہ ایک ایسی قرآنی آیت کا عمل ہے کہ جس کو پڑھنے سے اللہ آپ کو بے سہارا نہیں رہنے دے گا۔ بہت ہی مجرب عمل ھے جو شخص انتہائی مفلس اور غریب ہو اور اس کے لئے دو وقت کی روٹی بھی مشکل ہو اور اس بات کا خواہاں ہو کہ اس کی تنگدستی اور افلاس ہمیشہ کے لئے ختم ہوجائے تو ایسے میں یہ ایک آیت کا عمل اختیار کرے ،

ناظرین کرام انشاء اللہ اس ایک آیت کےعمل کی بدولت بہت جلد فقر و فاقہ سے نجات حاصل کرکے آپ مال و دولت سے سرفراز ہوجائیں گے اور ہر شخص عزت و تکریم کرے گا ۔خیال رہے کہ یہ عمل ضرورت مند کے لئے بتایا گیا ہے دنیا کے حریص کے لئے تو دنیا کے خزانے بھی ناکافی ہیں ۔ کیونکہ حضرت مسروق رحمۃ اللہ علیہ کہتے ہیں میں نے حضرت عائشہ رضی اللہ عنہا سے عرض کیا اماں جان! بھلا حضور اکرم ﷺ گھر میں داخل ہوتے وقت اکثر کیا فرمایا کرتے تھے ؟

فرمانے لگیں کہ میں نے آپؐ کو گھر میں داخل ہوتے اکثر یہ فرماتے سنا کہ اگر ابن آدم کے پاس سونے کی دو وادیاں ہو ں تو وہ تمنا کرے گا کہ اس کے ساتھ تیسری بھی مل جائے اور ابن آدم کے پیٹ کو تو مٹی ہی پُر کرسکتی ہے اور اللہ تعالیٰ توبہ کرنے والوں کی توبہ قبول فرما لیتے ہیں۔ اور اللہ تعالیٰ نے یہ مال تو اس لیے بنائے ہیں تاکہ ان کے ذریعے نماز قائم کی جائے اور زکوٰۃ ادا کی جائے۔ لہذا مسلمان کو چاہیے کہ اپنی امیدوں کو مختصر رکھے۔ کچھ پتا نہیں کس سانس میں اور کس قدم پر موت آجائے ؟

بندہ میرا مال میرا مال پکارتا ہے، حالاں کہ اس کا مال وہی ہے جو اس نے کھا لیا اور ختم کردیا، پہن لیا اور بوسیدہ کردیا یا صدقہ کردیا اور آخرت کے لیے باقی رکھا۔ بہرحال ہماری دعا ھے اللہ پاک ہمیں اپنا سہارا عطا فرمائے اور غیر کی محتاجی سے ہمیں محفوظ فرمائے۔۔۔ آمین۔ دوستو اگر خدانخواستہ آپ کا کوئی عزیز یا جاننے والا ان حالات کا شکار ہے تو اسے بھی یہ عمل بتائیں کہ یہ ثواب جاریہ ہے ۔

Leave a Comment