نا ممکن کو ممکن بنانے والا عمل !

namumkin ko mumkin bnany wala amal

بسم اللہ الرحمٰن الرحیم۔۔۔
السلام علیکم ،امیدہےآپ خیریت سے ہوں گےاورہماری دعابھی ہےکہ اللہ کریم،آپ کوسدا عافیت کے سائے میں رکھے۔ ناظرین کرام۔۔۔اگر ہم معاشرے میں نگاہ دوڑائیں تو ہر فرد غموں کامارا ہوا نظر آتا ہے‘ ہر کوئی کسی نہ کسی غم میں مبتلا ہے‘ کسی کو گھریلو الجھنوں کا غم ہے‘ کسی کو کاروباری بندش کا غم ہے‘ کسی کو جادو کھائے جارہا ہے اور کسی کو جسمانی بیماریوں نے نڈھال کررکھا ہے۔لہذاآج کی اس ویڈیو میں بہت ہی انمول قیمتی توفہ یعنی نا ممکن کو ممکن بنانے والا عمل آپ کو بتاؤں گا،

بلکہ اس ویڈیو میں ان لوگوں کے مشاہدات و تجربات بھی آپ کے ساتھ شیئر کروں گا ۔ آپ کے رشتہ میں رکاوٹ ہو یا اولاد کا نا ہونا۔یا پھر پسند کی شادی کا مسئلہ ہو یا محبوب کو حاصل کرنا ہو۔ یا جادو بندش ختم کرناہو یا اپنا ذاتی گھر حاصل کرنا ہو۔ روز روز کی لڑائی کا مسئلہ ہو شوہر کا بات نا ماننا محبت نا کرنا اور دیگر مسائل کے حل کے لیے یہ عمل اکسیر اعظم ہے بہت ہی پیارا اور بہت کامیاب عمل ہے آج تک جسنے بھی کیا تیر نشانے سے خطا نہیں گیا یہ عمل ایک لڑکی نے شادی کے لیےکیا تھا اس پر بندش تھی جادو کرنے والا تباہ برباد ہو گیا اسکی بندش ٹوٹ گئی ایک لڑکی کے رشتے نہیں آتے تھے۔

اسنے کیا تو اسکے رشتے کی لائن لگ گئی ایک لڑکی بیمار تھی رسولیاں تھی اسکے پیٹ میں وہ خود ہی غائب ہو گئی جیسے تھی ہی نہیں جس جس نے جس مقصد کے لیے کیا پورا ہوا خاص کر یہ عمل محبت اور محبوب کے حوالے سے اکسیر اعظم مانا جاتا ہے جو لوگ اپنا وقت اور پیسہ وظیفہ اور عا ملوں پر لگا چکے ہیں وہ ایک بار یہ ضرور کرے عمل بہت ہی کامیاب عمل ہےدوستو وظیفہ چونکہ اسلامی ہدایت کا نام ہے تو اس کے لئے نماز کی پابندی بہت ضرورہے .

ہم وظیفے انسانیت کی فلاح کے لئےاپلوڈ کرتے ہیں ۔ ناظرین کرام۔۔ سیدنا ابی بن کعب رضی اللہ تعالیٰ عنہٗ کہتے ہیں کہ میں نے رسول اللہ ﷺ سے عرض کیا : یارسول اللہ ﷺ میں آپ ﷺ پر کثرت سے درودبھیجتا ہوں‘ اپنی دعا میں کتنا وقت درود کیلئے وقف کروں؟آپ ﷺنے فرمایا: جتنا تو چاہے۔ میں نے عرض کیا: کیا ایک چوتھائی صحیح ہے؟۔ آپ ﷺ نے فرمایا:جتنا توچاہے لیکن اگر اس سے زیادہ کرے تو تیرے لیےاچھا ہے۔

میں نے عرض کیا: دو تہائی مقرر کردوں؟۔ آپ ﷺ نے فرمایا: جتنا تو چاہے‘ لیکن اگر اس سے زیادہ کرے تو تیرے ہی لیے بہتر ہے۔ میں نےعرض کیا: میں اپنی ساری دعا کا وقت درود کے لیے وقف کرتا ہوں۔ اس پر رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فرمایا: یہ تیرے سارے دکھوں اور غموں کیلئے کافی ہوگااور تیرے گناہوں کی بخشش کا باعث ہوگا۔لہذا اب جو میں عمل بتانے لگا ہو 100 میں سے 101 چانسز ہیں کہ آپ کا نا ممکن کام ان شاء اللہ ممکن ہو جائے گا۔

طریقہ عمل یہ ہے کہ وضو کی حالت میں رہتے ہوئے یہ وظیفہ کرنا ہے۔جائے نماز پر بیٹھ جائیں۔کعبہ شریف کی طرف رخ کر کے بیٹھیں۔اوّل آخر گیارہمرتبہ درود ابراہیمی پڑھیں۔پھر500 بار یہ درود پاک پڑھیں کہ ﺟَﺰَﻯ ﺍﻟﻠﻪُ ﻋَﻨَّﺎ ﺳَﻴِّﺪَﻧَﺎ ﻣُﺤَﻤَّﺪًﺍ ﺻَﻠَّﻰ ﺍﻟﻠﻪُ ﻋَﻠَﻴْﻪِ ﻭَﺳَﻠَّﻢَ ﻤَﺎ ﻫُﻮَ ﺃَﻫْﻠُﻪُعمل صبح شام کرنا ہے ۔ دوستو آپکا کام اگر صبح کا تو شام سے پہلے بھی ہو سکتا ہے اگر شام کاﺳ تو صبح سے پہلے بھی ہو سکتا ہے یین کے ایسا تز عمل ہے پہلے 7 دن مںم بھی ہو سکتا ہے عمل مدت 41 ۔دن جس کا جس دن کام ہو جاۓ اس دن کوئی چیز پکا کر بانٹ دے اور 2 نفل شکرانے کے بھی ادا کرے۔

حیض کے خاص دنو ں میں بھی یہ عمل کیا جا سکتا ہے۔ جب تک آپ کی مراد پوری نہ ہو، اس وظیفہ کو جاری رکھیں۔اس وظیفہ سے بہت سے لوگوں کو بیحد فوائد حاصل ہوئے ہیں۔ یہ وظیفہ انتہائی مفید اور مجرّب ہے۔ آپ بھی درود پاک کو اپنی زندگی کا وظیفہ بنالیںآپ کی دنیا بھی سنورے گی اور آخرت بھی۔ تنگدستی اور فاقہ درود پڑھ کر ہمیشہ کیلئے دور کریں۔ آنکھیں درد کرتی ہے تو درود پڑھیے!بلکہ حضور انور صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا کہ حق تعالیٰ نے مجھے وہ رتبے دیئے ہیں جو کسی نبی کو نہیں ملے۔

مجھ کو سب نبیوں پر فضیلت دی اور اعلیٰ درجے مقرر کئے۔ میری امت کیلئے مجھ پر درود پڑھنے میں میری قبر کے پاس ایک فرشتہ مقرر فرمایا جس کا نام منطوش ہے۔ اس کا سر عرش کے نیچے اور پاﺅںزمینکیتہہتکہیں۔اسکےاسیہزاربازواورہربازومیںاسیہزارپَراورہرپَرکےنیچےاسیہزاررونگٹےاورہررونگٹے کے نیچے ایک زبان ہے جس سے وہ اللہ تعالیٰ کی تسبیح و تحمید بیان کیا کرتا ہے اور اس شخص کیلئے دعائے مغفرت کیا کرتا ہے جو (میرا امتی) مجھ پر درود پڑھتا ہے

۔یاد رہے کہ حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم پر درود و سلام بھیجنا ایک مقبول ترین عبادت ہے۔ یہ سنت الٰہیہ ہے، اس نسبت سے یہ جہاں شانِ مصطفوی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے بے مثل ہونے کی دلیل ہے، وہاں اس عمل خاص کی فضیلت بھی اجاگر ہوتی ہے کہ یہ وہ مقدس عمل ہے جو ہمیشہ کے لئے لازوال، لافانی اور تغیر کے اثرات سے محفوظ ہے کیونکہ نہ خدا کی ذات کے لئے فنا ہے نہ آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم پر درود و سلام کی انتہا۔

اللہ تعالیٰ نہ صرف خود اپنے حبیب مکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم پر درود و سلام بھیجتا ہے بلکہ اس نے فرشتوں اور اہل ایمان کو بھی پابند فرما دیا ہے کہ سب میرے محبوب پر درود و سلام بھیجیں۔آئیے! ہم درود شریف کو اپنائیں اور پھر دیکھیں آپ کے مسائل کیسے حل اور آپ کےغموں کی کیسے کفایت ہوتی ہے۔

Leave a Comment