درود ابراہیمی کا وظیفہ

Drood Ibraheemi ka wazeefa

بسم اللہ الرحمٰن الرحیم۔۔۔
السلام علیکم ،امیدہےآپ خیریت سے ہوں گےاورہماری دعابھی ہےکہ اللہ کریم،آپ کوسدا عافیت کے سائے میں رکھے۔ ناظرین کرام۔۔۔ درود ابراہیمی جوکہ حضرت ابراہیم علیہ السّلام کے خاندان کا بیش بہا تحفہ ہے جو امّتِ محمدیہ کے حق میں پیش کیا گیا۔ اس کے بدلے میں اُمّتِ محمّدی کو یہ حکم دیا گیا کہ خاندانِ ابراہیمی کے حق میں پانچوں نمازوں میں دعا کیا کرو۔ اور اس دعا کو حضور صلی اللہ علیہ وسلم نے درود ابراہیمی کی صورت میں بوضاحت بیان فرمایا۔ اس درود پاک سے حضور صلی اللہ علیہ وسلم کی خاندانِ ابراہیم سے محبّت کا اظہار ہوتا ہے۔

اور اسی محبت کی بنا پر حضور صلی اللہ علیہ وسلم نے اپنے ایک بیٹے کا نام ابراہیم رکھا۔ اس کے علاوہ شبِ معراج میں حضرت ابراہیم علیہ السّلام نے حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم سے کہا تھا کہ اپنی اُمت کو میرا سلام کہہ دیجیئے گا اس سلام کے جواب میں آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے درود ابراہیمی میں خود سکھایا ۔یہ درود تمام درود کے صیغوں سے افضل ہے کیونکہ اس درود کے الفاظ حضور صلی اللہ علیہ وسلم کے سکھائےہوئےہیں۔ آپ کا جو بھی مقصد ھو گا انشا اللہ اس عمل سے اللہ پاک آپکی حاجت آپ کا مقصد پورا کرےگا۔

جس مقصد کے لیے بھی پڑھیں گے جیسے کاروبار۔ شادی۔ گھر میں برکت ، شوہر سے لڑائی یا گھر میں لڑائی ھوتی ھے یا گھر میں اتفاق کے لیے، جاب وغیرہ کیلئے یا جو بھی مقصد ھو اس کے لیے آپ یہ عمل پڑھ سکتےہیں۔ ناظرین کرام۔۔۔اس درود شریف کےبہت سے فائدے ہیں اس کے پڑھنے سے دنیا اور آخرت دونوں اچھی ھو جائیں گی۔نبیﷺ کی شفاعت بھی حاصل ھو جائیں گی۔آپ نے یہ عمل اس جگہ یعنی کہ اس کمرے میں کرنا ہے جہاں کوئی نہ ہوصرف آپ اکیلے ہی وہاں پر ہوں.

اگر سات راتوں سے آپ کی کوئی رات مِس ہوجا ئے تو آپ اس کو کسی اوررات بھی مکمل کر سکتے ہو.آپ نے یہ عمل جمعرات کے دن سے شروع کرنا ہے اور سات راتیں یعنی کے بدھ تک یہ عمل کرنا ہے۔ آپ نے یہ عمل کسی بھی نماز کے بعد کرناہے اور کوئی ایسا ٹائم رکھنا ہے کے ساتوں دن آپ اس ٹائم ہی یہ عمل کرسکیں.تو آپ نے نماز پر ہی بیٹھ کر قبلہ کی طرف منہ کرکے جو بھی پریشانی ہے اس کو ذہن میں رکھ کے یہ عمل کرنا ہے.کوشش کریں کہ یہ عمل رات کو کریں کیونکہ رات کو یہ عمل کرنے کی بہت زیادہ فضیلت ہوتی ہے .

آپ نے سب سے پہلے اول و آخر درود ابراہیمی گیارہ گیارہ مرتبہ پڑھنا ہے.اس کے بعد آ پ نے نوے مرتبہ صلی اللہ علیہ وسلم کو پڑھنا ہے۔اور پھر اللہ پاک کی بارگاہ میں دعا کریں. دوسرے دن آپ نے پھر اول و آخر دس دس مرتبہ درود ابراہیمی پڑھنا ہے اور درمیان میں اسی مرتبہ صلی اللہ علیہ وسلم کو پڑھنا ہے۔ اور پھر تیسرے دن آپ نے نو نو مرتبہ اول و آخر درود ابراہیمی کو پڑھنا ہے اور درمیان میں ستر مرتبہ صلی اللہ علیہ وسلم کو پڑھنا ہے.

چوتھے دن آپ نے آٹھ آٹھ مرتبہ اول و آخر درود ابراہیمی اور درمیان میں ساٹھ مرتبہ آپ نے صلی اللہ علیہ وسلم پڑھنا ہے۔ اور پانچوے دن آپ نے اول و آخر سات سات مرتبہ درود ابراہیمی اور درمیان میں پچاس صلی اللہ علیہ وسلم پڑھنا ہے. اور آپ نے اسی طرح باقی دونوں دن بھی اسی طرح ایک بار درور اور دس مرتبہ صلی اللہ علیہ وسلم کم کرکے پڑھنا ہے.اور آخر اللہ کے حضور رو کر دعا مانگنی ہے انشا ءاللہ آپ کی مشکل آسان ہوجائے گی۔

بلکہ حضرت سفیان ثوری رحمته الله علیه نے حج کے موقعے پر طواف کے دوران ایک نوجوان کو دیکھاتھا جو قدم قدم پر صرف درود پاک پڑھ رها تھا ۔ اس پر حضرت سفیان ثوری رحمته الله علیه نے اس سے کہا اے نوجوان ! هر جگه کی اپنی دعائیں اور نوافل و اذکار هیں لیکن تم هر جگه صرف درود پاک هی کیوں پڑھ رهے هو ؟اس نے بتایا که میں اور میرا والد گھر سے حج کے ارادے سے نکلے لیکن راستے میں میرا والد شدید بیمار هو گیا اور انتقال کر گیا .

موت کے بعد ان کا چہرا سیاه هو گیا . غم سے میری عجیب حالت هو گئی . اسی وقت میری آنکھیں بوجھل هوئیں اور مجھے نیند آ گئی۔میں نے خواب دیکھا که ایک حسین و جمیل شخص جن کا حسن لاجواب و بے مثال هے اور جن کے وجود سے خوشبو کی لپٹیں آ رهی هیں میرے والد کے پاس آئے اور اس کے چہرے سے کپڑا هٹا کر اپنا هاتھ پھیرا جس سے میرے والد کا چہرا روشن هو گیا . میں نے آگے بڑھ کر ان کا دامن تھام لیا اور پوچھا آپ کون هیں ؟انھوں نے فرمایاکہ تم مجھے نہیں پہچانتے ؟

میں تمہارا نبی محمد بن عبداللہ ( صلی الله علیه وآله وسلم ) هوں . تمہارا باپ بہت گناه گار تھا لیکن مجھ په کثرت سے درود پڑھتا تھا . اب جب اس پر مصیبت نازل هوئی تو اس نے مجھ سے فریاد کی اور جو هم سے فریاد کرے تو وه مایوس نہیں رهتا۔ دوستو یاد رہے کہ اس درود پاک کو نماز کے علاوہ کثرت سے پڑھنا دینی و دنیاوی فیوض و برکات حاصل کرنے کا بھی بہترین زریعہ ہے اور اللہ کی رحمت و خوشنودی بھی حاصل ہوتی ہے۔بلکہ دنیا کے تمام کاموں میں آسانی پیدا ہوتی ہے۔

اور قدم قدم پر اللہ کی مدد شامل حال رہتی ہے۔حاجات پوری ہو جاتی ہیں۔حضور صلی اللہ علیہ وسلم کی شفاعت واجب ہو جاتی ہے۔ رزق کی تنگی دور ہو جاتی ہے۔ *مال و اسباب میں برکت پیدا ہوتی ہے۔خاتمہ بالایمان ہوتا ہے۔ اس کے علاوہ آخرت کی زندگی سے متعلقہ تمام منازل آسان ہو جاتی ہیں۔اور اس درود پاک کو معمول سے پڑھنے والا جنت میں جائے گا۔درود پاک پڑھنے والے کو نہ قبر میں مٹی کھاتی ہے نہ کیڑے مکوڑے۔درود پاک جنت کا راستہ ہے۔

درود پاک کثرت سے پڑھنے والا مستجاب الدّعوات ہو جاتا ہے۔ یعنی اس کی ہر دعا قبول ہوتی ہے۔درود پاک کثرت سے پڑھنے والے کے گناہ معاف ہوتے ہیں اور درجات بلند ہوتے ہیں۔درود پاک دونوں جہانوں میں کامیابی کی کنجی ہے۔آئیے آقا کریم ﷺ کی بارگاہِ اقدس میں زیادہ سے زیادہ درُود شریف کے خوبصورت پھول پیش کرنے کی کوشش کریں۔ آپ خُود بھی درُود شریف پڑھا کریں اور اپنے گھر والوں کو بھی درُود شریف پڑھنے کی تلقین کریں

Leave a Comment