مصیبت کے وقت صبر اور ثابت قدمی کی دعا ۔۔۔۔

Museebat k waqt saber or sabit qadmii

بسم اللہ الرحمن الرحیم، السلام علیکم۔امید کرتے ہیں کہ آپ خیریت سے ہوں گے ۔۔اور ہماری دعا بھی ہے کہ اللہ کریم آپ کو سدا عافیت کے سائے میں رکھے۔۔۔ناظرینِ اکرام۔۔۔۔ اللہ تعالیٰ نے صبر کا مطالبہ اس لیے کیا ہے کہ حق اس دنیا میں موجود رہے، اگر حق پررہنے والے لوگ معدوم ہو جائیں تو پھر حق کہاں سے ملے گا۔اس طرح ایک فرد کی زندگی میں بھی حق کی بقا اسی میں ہے کہ وہ حق پر قائم رہنے کے لیے ثابت قدمی دکھائے۔

مصیبت کے وقت صبر اور ثابت قدمی کے لئے یہ دعا کے الفاظ قرآنِ پاک میں ۔۔ سورۃ البقرۃ ۔۔کی آیت نمبر ۔۔250۔۔میں موجود ہیں ۔۔ آپ بھی ان الفاظ کو زبانی یاد کر لیجئے رَبَّنَآ أَفْرِغْ عَلَيْنَا صَبْرًۭاوَثَبِّتْأَقْدَامَنَاوَٱنصُرْنَا عَلَى ٱلْقَوْمِ ٱلْكَٰفِرِينَ یعنی اےاے ہمارے رب ہمارے دلوں میں صبر ڈال دے اور ہمارے پاؤں جمائے رکھ اور اس کافر قوم پر ہماری مدد کرناظرین کرام ۔۔۔۔ آپ اس قرآنی دعا کو اپنی نماز میں بھی پڑھ سکتے ہیں۔۔ اور صبح شام کے وظائف میں بھی شامل کر سکتے ہیں۔

کیونکہ آثارصحابہ میں یہ بات بیان ہوئی ہے کہاس کا ایمان ہی نہیں جس کے پاس صبر نہیں۔‘‘یعنی جو آدمی صبر نہیں کرسکتا اس کا ایمان جاتا رہے گا۔ وہ صبر کی صفت نہ ہونے کے سبب سے اس بات سے محروم ہوتا ہے کہ وہ مشکل گھڑی میں ایمان کو قائم رکھ سکے ، وہ تھڑ دلوں کی طرح پل میں تولہ اور پل میں ماشہ ہوتا رہتا ہے۔دعا ہے کہ اللہ پاک ہمیں بھی اس قرآنی دعا کو پڑھنے والا بنائے اور ہمیں مصیبت کے وقت صبر ثابت قدم رہنے کی توفیق عطا فرمائے۔۔۔۔آمین

Leave a Comment