دشمنوں سے حفاظت والا استغفار

Dushman sy hifazat wala astaghfar

بسم اللہ الرحمن الرحیم، السلام علیکم۔ امید کرتے ہیں کہ آپ خیریت سے ہوں گے ۔۔اور ہماری دعا بھی ہے کہ اللہ کریم آپ کو سدا عافیت کے سائے میں رکھے۔۔۔ناظرینِ اکرام۔۔۔۔حضرت حسن بصریؒ کے متعلق مروی ہے کہ ان سے آ کر کسی نے قحط سالی کی شکایت کی تو انہوں نے اسے استغفار کی تلقین کی ، کسی دو سرے شخص نے فقر و فاقہ کی شکایت کی ، اسے بھی انہوں نے یہی نسخہ بتلایا ۔

ایک اور شخص نے اپنے باغ کے خشک ہونے کا شکوہ کیا ، اس سے بھی فرمایا : استغفار کر ۔ ایک شخص نے کہا ، میرے گھر اولاد نہیں ہوتی ، اسے بھی کہا اپنے رب سے استغفار کر ۔ کسی نے جب ان سے کہا کہ آپ نے استغفار ہی کی تلقین کیوں کی ؟ تو آپ نے آیت تلاوت کر نےکے بعد فرمایا کہ میں نے اپنے پاس سے یہ بات نہیں کی ، یہ وہ نسخہ ہے جو ان سب باتوں کے لیے اللہ نے بتلایا ہے ۔چناچہ دشمنوں سے حفاظت کے لئے استغفارکےیہ الفاظ قرآنِ پاک میں سورت ۔۔ الممتحنۃ ۔۔کی آیت نمبر ۔۔4اور 5۔۔میں موجود ہیں ۔۔

آپ بھی ان الفاظ کو زبانی یاد کر لیجئےرَبَّنَا عَلَیْکَ تَوَکَّلْنَا وَاِلَیْکَ اَنَبْنَا وَاِلَیْکَ الْمَصِیْرُ ، رَبَّنَا لَا تَجْعَلْنَا فِتْنَۃً لِّلَّذِیْنَ کَفَرُوْا وَاغْفِرْلَنَا رَبَّنَا اِنَّکَ اَنْتَ الْعَزِیْزُ الْحَکِیْمُ یعنی اے ہمارے رب ہم نے تجھ ہی پر بھروسہ کیا اور تیری ہی طرف ہم رجوع ہوئے اور تیری ہی طرف لوٹنا ہے۔ اے ہمارے رب! ہمیں ان کا تختہ مشق نہ بنا جو کافر ہیں اور اے ہمارے رب ہمیں معاف کر، بے شک تو ہی غالب حکمت والا ہے۔

ناظرین کرام ۔۔۔۔ آپ اس قرآنی دعا کو اپنی نماز میں بھی پڑھ سکتے ہیں۔۔ اور صبح شام کے وظائف میں بھی شامل کر سکتے ہیں۔ کیونکہ استغفار سے بڑھ کر کوئی اور کام یاب سفارش نہیں ہے۔ لہذا اللہ پاک ہمیں بھی اس قرآنی دعا کو پڑھنے والا بنائے اور ہمیں دشمنوں سے محفوظ فرمائے۔۔۔۔آمین

Leave a Comment