استغفار کے انتہائی مختصر الفاظ ۔۔۔۔

Astaghfar k intahai mukhtaser ilfaz

بسم اللہ الرحمن الرحیم، السلام علیکم۔ امید کرتے ہیں کہ آپ خیریت سے ہوں گے۔۔اور ہماری دعا بھی ہے کہ اللہ کریم آپ کو سدا عافیت کے سائے میں رکھے۔۔۔ناظرینِ اکرام۔۔۔۔ابن رجب رحمہ اللہ کہتے ہیں:” گناہوں سے استغفار کا مطلب یہ ہے کہ گناہوں کا مٹانے کا مطالبہ اللہ تعالی سے کیا جائے، انسان کو استغفار کی بہت زیادہ ضرورت ہے؛ کیونکہ انسان دن رات گناہوں میں ملوّث رہتا ہے، اور قران مجید میں توبہ و استغفار کا ذکر بار بار آیا ہے،اس کے ساتھ ساتھ انسان کو کثرت سے استغفار کی ترغیب بھی دلائی گئی ہے۔

گناہوں کی بخشش طلب کرنے پر اللہ کی طرف سے اسے قبول کرنے اور گناہ بخش دینے کا وعدہ ہے۔لہذا گناہوں کی معافی کے لئے استغفار کے انتہائی مختصر الفاظ حدیث پاک کی کتاب نسائی میں موجود ہیں ۔۔ آپ بھی ان الفاظ کو زبانی یاد کر لیجئے أَسْتَغْفِرُ اللهَ وَأَتُوْبُ إِلَيْهِ یعنی میں اللہ سے مغفرت کا طالب ہوں اور اسی کی طرف رجوع کرتا ہوں۔

ناظرین کرام ۔۔۔۔ آپ اس نبوی دعا کو اپنی نماز میں بھی پڑھ سکتے ہیں۔۔ اور صبح شام کے وظائف میں بھی شامل کر سکتے ہیں۔ کیونکہ ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ سے مروی ہے ، وہ کہتے ہیں کہ : “میں نے رسول اللہ ﷺ سے زیادہ کسی کوأَسْتَغْفِرُ اللهَ وَأَتُوْبُ إِلَيْهِکہتے ہوئے نہیں سنا۔۔۔ لہذا اللہ پاک ہمیں بھی اس نبوی دعا کو پڑھنے والا بنائے اور ہمارے گناہوں کو معاف فرمائے۔۔۔۔آمین

Leave a Comment