مخالفین کے دباؤ کے وقت پڑھی جانے والی دعا ۔۔۔۔

Mukhalifeen ky dabaoo k waqt perhi jany wali dua

بسم اللہ الرحمن الرحیم، السلام علیکم۔ امید کرتے ہیں کہ آپ خیریت سے ہوں گے۔۔اور ہماری دعا بھی ہے کہ اللہ کریم آپ کو سدا عافیت کے سائے میں رکھے۔۔۔ناظرینِ اکرام۔۔۔۔مخالفین کے دباؤ کے وقت پڑھی جانے والی یہ دعا سیدنا نوح علیہ سلام نے اس وقت کی جب مخالفین دعوت قبول کرنے کی بجائے ایذادینے پر تل گئے۔۔۔دھمکیاں دینے لگے اور لعنت و ملامت کرنے لگے چنانچہ یہ دعا فوراًقبول ہوئی اسی وقت اللہ نے آسمان کے دہانے کھول دیئے۔۔۔

موسلادھار بارش نازل ہوئی اور زمین سے چشمے پھوٹے۔۔۔ اس طرح اللہ تعالی نے نوح علیہ السلام اور ان کے ساتھیوں کو کشتی کے ذریعے بچا کر باقی سب کو غرق کر دیا۔۔۔۔یہ دعا کے الفاظ قرآنِ پاک میں سورت ۔۔القمر۔۔کی آیت نمبر ۔۔10۔۔میں موجود ہیں ۔۔ آپ بھی ان الفاظ کو زبانی یاد کر لیجئے تاکہ۔۔۔دنیا وآخرت کے فائدے آپ بھی حاصل کرسکیں(رب ) اَنِّىْ مَغْلُوْبٌ فَانْتَصِرْ۔۔۔۔
یعنی اےمیرے رب بیشک میں مغلوب ہوں میری مدد فرمائیے۔۔۔۔

پیارے دوستو۔۔۔۔آپ اس قرآنی دعا کو صبح شام کے وظائف میں بھی شامل کر سکتے ہیں۔ کیونکہ حضرت نوح نے ان الفاظ سے ہی اپنے رب کو پکارا اور کہا کہ بیشک میں کمزور ہوں۔ ان سے انتقام لینے کی مجھ میں قدرت نہیں کیونکہ حضرت نوح کی قوم میں بہت تھوڑے سے اور چند لوگ ایمان لائے جن میں اپنی قوم کا مقابلہ کرنے کی طاقت نہ تھی۔ تو آپ نے دعا کی کہ اے اللہ میری طرف سے بدلہ لے۔اللہ تعالیٰ نے حضرت نوح کی دعا قبول فرمالی اور حضرت نوح کی طرف سے ان کی قوم سے بدلہ لیا تو اللہ پاک ہمیں بھی اس قرآنی دعا کو پڑھنے والا بنائے اور مخالفین سے ہماری ہماری حفاظت فرمائے۔۔۔۔آمین

Leave a Comment